Connect with us

پاکستان

نوٹوں کی بارش شروع

شائع شدہ

کو

نوٹوں کی بارش شروع

سیاسی سرگرمیوں میں تیزی اور انتخابی مہم شروع ہونے کے بعد انتخابات کے دوران پارٹی اور امیدواروں کی تشہیر کے لیے پینافلیکس، بینرز، پارٹی پرچموں کی تیاری اور فروخت کا کاروبار بھی چمک اٹھا ہے۔
عام انتخابات کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں اگرچہ الیکشن کمیشن کی جانب سے بڑے بل بورڈز اور پینا فلیکس پر پابندی عائد ہے تاہم سیاسی جماعتوں کی جانب سے پول بینرز آویزاں کیے جارہے ہیں اور بڑے پیمانے پر پارٹی پرچم تیارکیے جارہے ہیں جس سے ایڈورٹائزنگ کے کاروبار سے وابستہ افراد کی مصروفیات بھی بڑھ گئی ہیں۔ کراچی میں ایڈورٹائزنگ کے میٹریل کی بڑی مارکیٹ الکرم سکوائر لیاقت آباد میں ہے جہاں سیاسی جماعتوں کے لیے پارٹی پرچم، بینرز، پول سائن اور پینا فلیکس کی تیاری کا کام دن رات جاری ہے تشہیری میٹریل بنانے والوں کا کہنا ہے کہ انتخابی مہم کا ابھی آغاز ہوا ہے اور کام اتنا زیادہ نہیں جتنی توقع کی جارہی ہے تاہم اس وقت بھی آرڈر پورے کرنے کے لیے اضافی لیبر کی مدد لی جارہی ہے۔

پاکستان

باپ کا بدلہ

شائع شدہ

کو

باپ کا بدلہ

پیرپگاڑا نے کہا آصف زراداری نے بھٹو خاندان کے کسی فرد کو ٹکٹ نہ دیکر باپ کا بدلہ لیا ہے آصف زرداری نے مرتضیٰ بھٹو اور شہید بینظیر بھٹو کے قاتلوں کا علم ہونے کے باوجود قوم سے غداری کی۔ سندھ میں امن سکیورٹی اداروں کی وجہ سے آیا صوبے میں اب جی ڈی اے کی حکومت بنے گی کیونکہ پیپلزپارٹی نے 10 سال تک کسان کے لئے کچھ نہیں کیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سب برابر

شائع شدہ

کو

سب برابر

عبوری وزیر دفاع لیفٹیننٹ جنرل (ر) نعیم خالد لودھی نے کہا کسی ایک سیاسی جماعت کو نوازنے کا تاثر درست نہیں ہم پوری کوشش کر رہے ہیں کہ تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ یکساں سلوک ہو جس کو شکایت ہے وہ الیکشن کمیشن سے رجوع کرکے امتیازی سلوک کرنے والے نگران وزیر کا نام بھی بتائے- نوازشریف کی آمد پر جم غفیر نہیں بننے دیا جا سکتا تھا کیونکہ اس کے نتائج خطرناک ہو سکتے تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

خراب قیمہ دیا گیا

شائع شدہ

کو

خراب قیمہ دیا گیا

مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ نواز شریف کو جیل میں فرش پر سلایا جاتا ہے، قوم نے جسے تین دفعہ وزیرِاعظم منتخب کیا اس کے ساتھ یہ سلوک کیا جا رہا ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ سابق وزیرِاعظم میاں نواز شریف کو جیل میں فرش پر سلایا جاتا ہے، ان کے ذاتی معالج کو ملنے کی اجازت نہیں، جیل کے ڈاکٹر ہی ان کا معائنہ کرتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ نواز شریف اور مریم کو آپس میں ملنے کی اجازت نہیں ہے لیکن دونوں کے جذبے میں کوئی کمی نہیں آئی۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ نواز شریف کو گھر کا کھانا نہیں دیا جا رہا، انھیں ایک دن خراب قیمہ دیا گیا، تین دفعہ منتخب ہونے والے وزیرِاعظم کیساتھ ایسا سلوک کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نواز شریف کا پیغام تھا کہ پچیس جولائی کو ووٹ دے کر بدلہ لیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں