Connect with us

انٹرنیشنل

فیس3500ریال

شائع شدہ

کو

فیس3500ریال

سعودی عرب کےلئے پاکستان کی ویزا فیس دیگر ممالک کی نسبت زیادہ ہے۔ پاکستان جانے والے سعودیوں کےلئے انفرادی وزٹ ویزا 3600 ریال جبکہ بزنس ویز ے پر جانے والے سعودی تاجروں کےلئے 5500 ریال فیس مقرر ہے۔ فیس گزشتہ 2برس سے نافذ ہے۔ سفارتی ذرائع کے مطابق ویزا فیس دوطرفہ بنیادوں پر مقرر کی جاتی ہے جس کا بنیادی مقصد باہمی تجارت اور سیاحت کا فروغ ہوتا ہے ۔ سعودی عرب جہاں ترقی کے نئے دور سے گزر رہا ہے وہاں پاکستان بھی معاشی و صنعتی ترقی کی جانب گامزن ہے ۔ سی پیک منصوبہ جہاں پاکستان کی معاشی وصنعتی ترقی کےلئے اہم ہے وہاں دنیا کے دیگر ممالک کےلئے بھی باعث کشش ہے ۔ دوسری جانب سعودی عرب کا وژن 2030 ترقی کے نئے دور کا اہم منصوبہ ہے جو بیرونی سرمایہ کاری اور صنعتوں کے قیام کےلئے انتہائی اہم ثابت ہوگا ۔ مختلف ممالک اپنی ترجیحات کے مطابق اپنی خارجہ پالیسی مرتب کرتے ہیں جن میں ویزوں کا اجرااور دیگر اہم امور مدنظر رکھے جاتے ہیں ۔ کسی بھی ملک کی معیشت کے استحکام و ترقی کےلئے صنعتوں کا قیام ، تجارت اور سیاحت کا فروغ انتہائی اہم عنصر ہوتا ہے جس کے لئے بیرونی ممالک سے تجارتی وفود کا تبادلہ کیا جاتا ہے جبکہ ملکی سیاحت کے فروغ کےلئے وزارت خارجہ دیگر اداروں کے تعاون سے ویزوں کا حصول آسان بناتا ہے تاکہ بیرونی سیاحوں سے ملکی معیشت مستحکم ہو ۔ ملائیشیا کی معیشت کا بنیادی جز سیاحت ہے جہاں سیاحوں کو ترغیب دینے کےلئے ویزا فیس انتہائی کم رکھی گئی ہے۔

انٹرنیشنل

10سالہ رہائشی ویزا

شائع شدہ

کو

10سالہ رہائشی ویزا

متحدہ عرب امارات نے ویزا پالیسی میں بڑی تبدیلیوں کا اعلان کیا ہے،جس کے بعد اب سرمایہ کاروں پروفیشنلز اور ان کے اہلخانہ کو 10 سالہ رہائشی ویزا مل سکے گا۔ملک میں کمپنیوں کی فارن آنر شپ سسٹم میں بھی تبدیلی کی گئی ہے جس سے عالمی سرمایہ کاروں کی طرف سے 100 فیصد مل سکے گا۔ متحدہ عرب امارات نے اتوار کو سرمایہ کاروں اور پروفیشنلز اور ان کے اہلخانہ کیلئے 10 سالہ رہائشی ویزا کا اعلان کیا ہے ،ڈبلیو اے ایم کے مطابق کابینہ نےقومی معیشت میں صلاحیتوں کو راغب کرنے کیلئے ویزا سسٹم کا اعلان کیا ہے۔نئے ویزا سسٹم سے سرمایہ کاروں اور صلاحیت کاروں کو 10 سالہ رہائش مل سکے گی جس میں بالخصوص میڈیکل ،سائنٹیفک ،ریسرچ اور ٹیکنیکل فیلڈ ز کے ساتھ ساتھ تمام سائنسدانوں متحدہ عرب امارات میں پڑھنے والے طالبعلموں اور موجدوں کو پانچ سالہ رہائش مل سکے گی ،متحدہ عرب امارات کے میڈیا کے مطابق 10 سالہ ویزا خصوصی طلبا کیلئے ہے۔
متحدہ عرب امارات کے نائب صدر ،وزیرا عظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد المختوم کی سربراہی میں کابینہ نے ابوظہبی میں صدارتی محل میں فیصلے کی منظوری دی۔اجلاس میں ڈپٹی وزیر اعظم اور وزیر داخلہ شیخ سیف بن زید النہیان ،نائب وزیر اور وزیر صدارتی امور شیخ منصور بن زید النہیان دیگر وزرا کے ساتھ موجود تھے۔ملک میں کمپنیوں کے فارن اونر شپ سسٹم میں تبدیلی کا بھی اعلان کیاگیا ،جس کے مطابق سال کے آخر میں گلوبل انوسٹرز کی جانب سے 100 فیصد حصول ہوسکے گا۔ شیخ محمد بن راشد المختوم نے معیشت کت وزیر کو ہدایت دی کہ قرارداد پر عملدرآمد اور اسے جمع کرانے کیلئے رواں سال کے تیسرے کوارٹر میں کیا جائے۔قانون کے مطابق غیر ملکی عموماً کسی اماراتی فرم سے 49 فیصد سے زائد نہیں لے سکیں گے علاوہ یہ کہ وہ خصوصی فری زون میں شامل ہو۔

پڑھنا جاری رکھیں

انٹرنیشنل

پھر کرین حادثہ

شائع شدہ

کو

پھر کرین حادثہ

مسجد الحرام کے زیر تعمیر حصے میں ایک کرین حادثہ ہوا ہے تاہم حادثے میں کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا،کرین آریٹر معمولی زخمی ہوا ہے جسے طبی امداد کے بعد اسپتال سے رخصت کردیا گیا۔ گورنر مکہ کے آفس ترجمان نے واقعے کی تصدیق کرتے ہو ئے واقعے کی تفصیل بتاتے ہو ئے کہا کہ ترقیاتی کام میں مصروف ایک کرین کا حصہ اچانک گر گیا تاہم وہ جگہ نماز کے لئے وقف نہیں ہےاسی لئے زائرین سے بھی خالی تھی،حادثے کے نتیجہ میں کرین کا آپریٹر معمولی زخمی ہوا جسے طبی امداد کے بعد اسپتال سے فارغ کر دیا گیا۔ گورنر مکہ مکرمہ کےسیکریٹریٹ کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پراپنے پیغام میںوضاحت کی ہے کہ حادثے کا مقام نماز کے لئے وقف نہیں تھا اور وہاں زائرین بھی موجود نہیں تھے۔ واضح رہے کہ ستمبر2015میں ہونے والے کرین حادثے میں100سے زائد افراد جاں بحق اور300سے زائد افراد زخمی ہوئے تھے۔اس حادثے کے شہدا میں کوئی پاکستانی شامل نہیں تھا 22 زخمی پاکستانیوں کو سعودی عرب کے مختلف اسپتالوں میںلایا گیا تھا ۔

پڑھنا جاری رکھیں

انٹرنیشنل

حکمت عملی کا اعلان آج

شائع شدہ

کو

حکمت عملی کا اعلان آج

امریکی وزیر خارجہ مائیک پوم پیوایران کے ساتھ ختم کئے گئے جوہری معاہدے پرآج نئی امریکی حکمت عملی کا اعلان کریں گے۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق نئی امریکی حکمت عملی کا مقصد اپنے یورپی اتحادیوں کو ساتھ ملاکر ایران پر نئی اورمزید سخت پابندیاں عائد کرنا ہے۔ ایران پرمزید پابندیوں کا امریکی مقصد ایران کو جوہری پروگرام اور بلاسٹک میزائل پروگرام پر بات چیت یا نئے معاہدے کیلئے میز پرلا نا ہے،تاہم یہ نیا معاہدہ نئی سیکیورٹی معاہدے کی بنیاد پرہی طے کئے جائیں گے۔ امریکی وزرات خارجہ کے تر جمان کے مطابق ایران کے جوہری اور بلاسٹک میزائل پر وگرام پر امریکی نئی حکمت عملی کے اعلان کے موقع پر مائیک پوم پیو نئے سفارتی روڈ میپ کے اعلان کے ساتھ اس تنازع کی عالمی ترجیحات اور اس کے خد خال کو بھی واضح کریں گے۔ قبل ازیں امریکی وزارت خارجہ اس خواہش کا اظہار کر چکا ہے کہ امریکا کی بھرپور کوشش ہے کہ اپنے اتحادیوں خاص طور پریورپی اتحادیوں کواپنے ساتھ ملایا جائے مشترکہ اورکثیر الجہتی حکمت عملی کو اختیار کیا جائے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں