Connect with us

پاکستان

سنسنی خیزانکشافات

شائع شدہ

کو

سنسنی خیزانکشافات

ڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثناء اللہ عباسی کا کہنا ہے کہ سندھ میں سی پیک اور دیگر منصوبوں پر کام کرنے والے غیرملکیوں پر حملوں میں ملوث تمام ملزمان گرفتار کئے جاچکے ہیں اور صوبہ ماضی کے مقابلے میں اب کہیں زیادہ محفوظ ہے۔ سی ٹی ڈی نے سندھ میں دہشت گردی کے حوالے سے سرگرم گروہ کے دو ملزمان کو گذشتہ ہفتے گرفتار کیا تھا جن سے تفتیش جاری ہے۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزم فیاض حسین ڈاہری خیرپور کا رہائشی ہے جس کے کرمنل ریکارڈ کے مطابق وہ تنظیمی قیادت کے ایماء پر ہنگامہ آرائی اور پرتشدد کارروائیوں میں ملوث رہا۔ تفتیشی رپورٹ کے مطابق ملزم رائفل اور پستول چلانے کا ماہر ہے جو صرف ایک بار ہنگامہ آرائی کے مقدمے میں گرفتار ہوا، ملزم کے مطابق اس کا ایک بھائی گدا حسین پاکستان آرمی جبکہ دوسرا بھائی سکندر علی ریلوے پولیس میں کانسٹیبل ہے۔
ملزم نے جئے سندھ متحدہ محاذ میں شمولیت کے بارے میں دلچسپ انکشاف کیا ہے جس کے مطابق اس کی آبائی گاؤں سب وڈیرہ میں کریانہ کی دکان تھی جس کے لیے سامان لینے وہ خیرپور جاتا تھا تو وہاں راجا بھمرو نامی رہنما اور پھر ان کے توسط سے سونالہ میمن سے اچھی سلام دعا ہوگئی جنہوں نے اُسے پارٹی میں متعارف کرایا۔ ملزم کے مطابق راجہ بھمرو کی ہلاکت کے بعد اسے تنظیم کی مرکزی کمیٹی نے ضلع خیرپور کا انچارج بنایا جب کہ تنظیم کے ضلعی صدر شیر سومورو اور فیاض خمیسانی اسے وارداتوں کیلئے ٹارگٹ دیتے تھے۔ ملزم نے انکشاف کیا کہ پارٹی کی میٹنگز میں ملک توڑنے، علیحدہ سندھودیش بنانے، سندھیوں کے خلاف زیادتیوں کے نام پر لوگوں کو اُکسانے اور خود ساختہ باتیں بنا کر لسانیت پھیلانے کے حوالے سے ہدایات دی جاتی تھیں، ملزم کے مطابق اس منافرت کو بڑھانے کے لیے پارٹی کا سوشل میڈیا سیل بھی کافی سرگرم ہے۔
دہشگردی کی بڑی وردات کے حوالے سے ملزم نے انکشاف کیا کہ دسمبر 2016 میں نصراللہ کے ہمراہ سکھر میں سی پیک منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئرز پر نیشنل ہائی وے پر سائیکل بم سے حملہ کیا اور دیسی ساختہ بم ایک سائیکل میں نصب کرکے ریمورٹ کے ذریعے دھماکا کیا گیا۔ ملزم کے مطابق بم دھماکے کا مقصد چائنیز کو خوف و ہراس میں مبتلا کرنا تھا تاکہ وہ سی پیک کے منصوبے پر کام چھوڑ کر چلے جائیں، واردات کے بعد وہ روپوش ہوگئے مگر ان کا ایک ساتھی نصراللہ پکڑا گیا تھا۔ ملزم نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ سندھ میں جاری سی پیک اور دیگر ترقیاتی منصوبوں کو ناکام بنانے اور کام کرنے والے غیرملکی انجینئرز پر حملوں میں متحدہ محاذ شفیع برفت گروپ کے عبدالغفار، گلاب حسین، غلام مصطفی، رضا محمد، محمد حنیف، محمد حسن، یونس چاچڑ، محمد قاسم، ظہور حسین اور عبدالغفار شامل ہیں۔
ملزم نے انکشاف کیا کہ جون 2017 میں ضلع گھوٹکی کے گاؤں کالو مکھن کے پاس سی پیک منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئرز پر فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں ایک چینی انجینئر اور پولیس کانسٹیبل زخمی ہوگئے تھے۔ ملزم نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ ان کی تنظیم پاکستان مخالف اور سندھو دیش بنانے کے مبینہ منصوبے اور عوام کو ملک کے سیکورٹی اداروں کے خلاف اکسانے کیلئے لٹریچر اور تحریری مواد سے اکسایا جاتا ہے، ملزم کے بیان کے مطابق اس سلسلے میں سندھ میں بڑے منظم انداز میں کام جاری ہے۔

پاکستان

100 دن کاپروگرام لفظی مجموعہ

شائع شدہ

کو

100 دن کاپروگرام لفظی مجموعہ

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے تحریک انصاف کا پہلے 100 دن کا پروگرام جھوٹے دعوو¿ں اور لفاظی کا مجموعہ قرار دے دیا۔ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی جانب سے حکومت ملنے کی صورت میں 100 دن کے پلان کا اعلان کیا گیا جس پر مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے بھی شدید تنقید کی۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ایک کروڑ نوکریوں، 50 لاکھ گھروں کا دعویٰ، ایک ارب درخت اور 350 ڈیموں کی مانند سراب ہے، تحریک انصاف کا پہلے 100 دن کا پروگرام جھوٹے دعووں اور لفاظی کا مجموعہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ احتساب کانعرہ لگانے والوں نے کے پی میں اپنا بنایا احتساب کمیشن بھی نہ چلنے دیا، خیبر بینک کی تباہی عمران کے دور میں ہی ہوئی۔سعد رفیق کا کہناتھاکہ عمران کی حکومت میں خیبرپختونخوا پولیو کا گھر بن گیا، صوبائی حکومت نے ڈینگی کا مقابلہ کیے بغیر شکست مان لی جب کہ پشاور کے آدم خور چوہے بھی عمران کی حکمرانی کو کاٹ رہے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بیانات ریکارڈ

شائع شدہ

کو

بیانات ریکارڈ

ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے احسان صادق کی سربراہی میں قائم پانچ رکنی تحقیقاتی ٹیم اصغر خان کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف ،جاوید ہاشمی ،یونس حبیب اور دیگر کے بیانات رواں ہفتے قلمبند کرے گی ،یہ ٹیم سابق آرمی چیف اسلم بیگ اور سابق ڈی جی آئی ایس آئی اسد درانی کے بیانات ریکارڈ کر چکی ہے ،90کی دہائی میں آئی ایس آئی کی طرف سے سیاستدانوں میں رقوم کی تقسیم کے الزام میں سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کو اصفر خان کیس کی تحقیقات کر کے رپورٹ جمع کرانےکی ہدایت کر رکھی ہے۔ ڈی جی ایف آئی اے نے کیس کی تحقیقات کے لئے ایف آئی اے افسروں پر مشتمل 5 رکنی کمیٹی قائم کر رکھی ہے۔کمیٹی کے سربراہ ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے احسان صادق ہیں جبکہ کمیٹی ارکان میں ڈائریکٹر ایف آئی اے پنجاب ڈاکٹر عثمان انور،ڈائریکٹر انٹرپول طارق نواز ملک۔ڈائریکٹر امیگریشن ڈاکٹر رضوان اور ڈائریکٹر لاء علی شیر جاکھرانی شامل ہیں۔ ڈائریکٹر پنجاب عثمان انور کمیٹی کے سیکرٹری کا کام کر رہے ہیں۔ کمیٹی اصغر خان کیس کے تمام کرداروں کو طلب کر کے ان کے بیانات ریکارڈ کرے گی جبکہ کیس سے متعلقہ ریکارڈ کی چھان بین کرے گی۔ کمیٹی اپنے کام سے متعلق ڈی جی ایف آئی اے کو باقاعدگی سے آگاہ کر رہی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ملزم کراچی میں پکڑا گیا

شائع شدہ

کو

ملزم کراچی میں پکڑا گیا

خوشاب میں کم عمر بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزم امجد کا سراغ لگ گیا, کراچی میں گرفتار سیریل ریپسٹ کا ڈی این اے میچ کرگیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق ڈی جی فرانزک اشرف طاہر نے ملزم امجد علی کا ڈی این اے میچ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزمان نے 2017ءمیں خوشاب اور2018ءمیں کراچی میں بچیوں کو ہوس کا نشانہ بنایا۔ کراچی میں ہونے والی زیادتی کے کیس میں ملزم اور متاثرہ بچی کے ڈی این اے ٹیسٹ کیلئے نمونے فرانزک کو بھجوائے گئے تھے۔ ٹیسٹ کی رپورٹ میں ملزم کا ڈی این اے خوشاب اور کراچی میں بچیوں سے زیادتی کے کیس میں میچ کرگیا ہے جبکہ ڈی این اے رپورٹ بھی متعلقہ افسران کو ارسال کردی گئی ہے۔ واضح رہے کہ 2017ءمیں خوشاب میں بچی سے زیادتی کے جرم میں پولیس نے سجاد نامی شخص کو گرفتارکیا تھا، اس کا ڈی این اے میچ نہیں ہو اتھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں