Connect with us

پاکستان

سنسنی خیزانکشافات

شائع شدہ

کو

سنسنی خیزانکشافات

ڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثناء اللہ عباسی کا کہنا ہے کہ سندھ میں سی پیک اور دیگر منصوبوں پر کام کرنے والے غیرملکیوں پر حملوں میں ملوث تمام ملزمان گرفتار کئے جاچکے ہیں اور صوبہ ماضی کے مقابلے میں اب کہیں زیادہ محفوظ ہے۔ سی ٹی ڈی نے سندھ میں دہشت گردی کے حوالے سے سرگرم گروہ کے دو ملزمان کو گذشتہ ہفتے گرفتار کیا تھا جن سے تفتیش جاری ہے۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزم فیاض حسین ڈاہری خیرپور کا رہائشی ہے جس کے کرمنل ریکارڈ کے مطابق وہ تنظیمی قیادت کے ایماء پر ہنگامہ آرائی اور پرتشدد کارروائیوں میں ملوث رہا۔ تفتیشی رپورٹ کے مطابق ملزم رائفل اور پستول چلانے کا ماہر ہے جو صرف ایک بار ہنگامہ آرائی کے مقدمے میں گرفتار ہوا، ملزم کے مطابق اس کا ایک بھائی گدا حسین پاکستان آرمی جبکہ دوسرا بھائی سکندر علی ریلوے پولیس میں کانسٹیبل ہے۔
ملزم نے جئے سندھ متحدہ محاذ میں شمولیت کے بارے میں دلچسپ انکشاف کیا ہے جس کے مطابق اس کی آبائی گاؤں سب وڈیرہ میں کریانہ کی دکان تھی جس کے لیے سامان لینے وہ خیرپور جاتا تھا تو وہاں راجا بھمرو نامی رہنما اور پھر ان کے توسط سے سونالہ میمن سے اچھی سلام دعا ہوگئی جنہوں نے اُسے پارٹی میں متعارف کرایا۔ ملزم کے مطابق راجہ بھمرو کی ہلاکت کے بعد اسے تنظیم کی مرکزی کمیٹی نے ضلع خیرپور کا انچارج بنایا جب کہ تنظیم کے ضلعی صدر شیر سومورو اور فیاض خمیسانی اسے وارداتوں کیلئے ٹارگٹ دیتے تھے۔ ملزم نے انکشاف کیا کہ پارٹی کی میٹنگز میں ملک توڑنے، علیحدہ سندھودیش بنانے، سندھیوں کے خلاف زیادتیوں کے نام پر لوگوں کو اُکسانے اور خود ساختہ باتیں بنا کر لسانیت پھیلانے کے حوالے سے ہدایات دی جاتی تھیں، ملزم کے مطابق اس منافرت کو بڑھانے کے لیے پارٹی کا سوشل میڈیا سیل بھی کافی سرگرم ہے۔
دہشگردی کی بڑی وردات کے حوالے سے ملزم نے انکشاف کیا کہ دسمبر 2016 میں نصراللہ کے ہمراہ سکھر میں سی پیک منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئرز پر نیشنل ہائی وے پر سائیکل بم سے حملہ کیا اور دیسی ساختہ بم ایک سائیکل میں نصب کرکے ریمورٹ کے ذریعے دھماکا کیا گیا۔ ملزم کے مطابق بم دھماکے کا مقصد چائنیز کو خوف و ہراس میں مبتلا کرنا تھا تاکہ وہ سی پیک کے منصوبے پر کام چھوڑ کر چلے جائیں، واردات کے بعد وہ روپوش ہوگئے مگر ان کا ایک ساتھی نصراللہ پکڑا گیا تھا۔ ملزم نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ سندھ میں جاری سی پیک اور دیگر ترقیاتی منصوبوں کو ناکام بنانے اور کام کرنے والے غیرملکی انجینئرز پر حملوں میں متحدہ محاذ شفیع برفت گروپ کے عبدالغفار، گلاب حسین، غلام مصطفی، رضا محمد، محمد حنیف، محمد حسن، یونس چاچڑ، محمد قاسم، ظہور حسین اور عبدالغفار شامل ہیں۔
ملزم نے انکشاف کیا کہ جون 2017 میں ضلع گھوٹکی کے گاؤں کالو مکھن کے پاس سی پیک منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئرز پر فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں ایک چینی انجینئر اور پولیس کانسٹیبل زخمی ہوگئے تھے۔ ملزم نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ ان کی تنظیم پاکستان مخالف اور سندھو دیش بنانے کے مبینہ منصوبے اور عوام کو ملک کے سیکورٹی اداروں کے خلاف اکسانے کیلئے لٹریچر اور تحریری مواد سے اکسایا جاتا ہے، ملزم کے بیان کے مطابق اس سلسلے میں سندھ میں بڑے منظم انداز میں کام جاری ہے۔

پاکستان

الیکشن سے مایوس

شائع شدہ

کو

الیکشن سے مایوس

چیرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے کہ میں الیکشن کولیکربہت مایاس ہوں کیونکہ انتخابات کے حوالےسے اچھی خبریں موصول نہیں ہورہی جب کہ الیکشن میں عوام کو اپنا بھرپور کردار ادا کرنا ہو گا۔ رپورٹ کے مطابق عمران خان نتھیا گلی ،جہلم اورلاہور میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے سیاسی مخالفین پرخوب گرجےبرسے، ان کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ نے ملک کوقرضوں میں ڈبودیا ہے لہذا اس جماعت کو ہر گز ووٹ نہ دیں۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ انتخابات کے حوالےسے اچھی خبریں موصول نہیں ہورہی الیکشن میں عوام کو اپنا بھرپور کردار ادا کرنا ہو گا جب کہ کرپٹ حکمران کبھی کرپشن ختم نہیں کرسکتے، لیکن ہم اقتدارمیں آکرعوام کاپیسہ عوام پرہی خرچ کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بلے اوربلی کے خلاف

شائع شدہ

کو

تو تڑاک پر اتر آئے

ٹیکسلا میں پہلے ٹمبر مارکیٹ اور بعد میں نواب آباد میں انتخابی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے اپنے مخالفین کو نشانے پر لئے رکھا، ان کا کہنا تھا کہ میرے مخالفین حواس باختہ ہو چکے ہیں اور ڈر کی وجہ سے حلقہ میں عمران خان کو بلوا لیا ہے جب کہ میں اس حلقے کا منتخب نمائندہ نہیں تھا مگر ٹیکسلا کو تحصیل کا درجہ میں نے دلوایا، سوئی گیس دلوائی ، سڑکیں بنوائیں اور وفاداری کرتے ہوئے یہاں خدمت کی۔
چوہدری نثار نے اپنے جلسے میں لیٹ آنے والوں کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ جلسے میں لیٹ آنے والوں کواہم پیغام دیتا ہوں کہ الیکشن والے دن بھی اسی طرح لیٹ آئے تو کوئی آپکا انتظار نہیں کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن نعروں اور تقریروں سے نہیں ، خدمت کی بنیاد پر لڑا جاتا ہے جب کہ شیر کے نشان والوں کی 25 جولائی کو ضمانتیں ضبط ہوں گی، یہ شیر نہیں دراصل بلی ہے، بَلے اور بلی کے خلاف جیپ کو ووٹ دینا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

نوازشریف کودفاع کاحق

شائع شدہ

کو

نئی مردم شماری چیلنج

پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ ووٹرز کو سوچنا ہوگا کہ انہیں لاشوں والا یا روشنی والا پرامن کراچی چاہیے۔ مصطفیٰ کمال نے وفد کے ہمراہ مرکزی رویت ہلاک کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمٰن سے ملاقات کی ،باہر آکر میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ سندھ کے عوام کے پاس پی ایس پی کے سوا کوئی آپشن نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اندرون سندھ 2 روزہ انتخابی دورے کا آغاز مفتی منیب الرحمٰن سے دعائیں لے کر کررہے ہیں ۔ حیدرآباد پہنچنے کے بعد مصطفیٰ کمال نے دعویٰ کیا کہ کراچی کو 6 ماہ میں دوبارہ روشنیوں کا شہر بنادیں گے اور حیدر آباد 3 ماہ بعد صاف ستھرا چمکتا ہوا شہر ہوگا ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہم وہ نہیں جو ووٹ لینے کے بعد بولیں ہمارے پاس اختیار نہیں، لوگوں کو امید ہےکہ ظلم کی سیاہ رات ختم ہونےوالی ہے۔ پی ایس پی سربراہ نے مزید کہا کہ دنیا چاند پرجا رہی ہے اور سندھ کےلوگ پانی کی بوند بوند کو ترس رہےہیں، یہاں تعلیم ہے نہ صحت کی سہولیات ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سندھ کےعوام کو طویل عرصہ کےبعد ہوا کا تازہ جھونکا پی ایس پی کی شکل میں ملا ہے،پی ایس پی کے امیدواروں کا کسی سےنہیں ،اپنے امیدواروں سےہی مقابلہ ہے۔ مصطفیٰ کمال نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف پر جو الزامات ہیں انہیں اس کا دفاع کرنے کا پورا حق ملنا چاہیے،انصاف ہوتا ہوا نظر آنا چاہیے۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں