Connect with us

صحت

موسم گرما کا ڈائٹ پلان

شائع شدہ

کو

موسم گرما کا ڈائٹ پلان

کچھ عرصہ قبل یہ مشہور تھا کہ صنف نازک اپنی خوبصورتی اور نزاکت کے حوالے سے خاصی حساس ہوتی ہیں تاہم اس کے بعد خواتین اور ان کی حساسیت میں تبدیلی دیکھنے میں آئی اور خوبصورتی کے ساتھ ساتھ خواتین خود کو سلم و اسمارٹ رکھنے میں کافی دلچسپی لینے لگیں اور یہ دلچسپی اب تیزی سے جنون کی حیثیت اختیار کرتی جارہی ہے۔ موسم گرما کی آمد کے ساتھ جہاں خواتین ایک طرف گرمیوں کے ملبوسات کی خریداری میں دلچسپی لینے لگتی ہیں وہیں انھیں گرمیوں کے شروع ہوتے ہی اپنی ڈائٹنگ متاثر ہونے کی فکر بھی ستانے لگتی ہےچونکہ گرمیوں کے شروع ہوتے ہی ہر ایک کے کھانے پینے کے انداز میں تبدیلی آجاتی ہے یہی وجہ ہے کہ وزن کم کرنے کی خواہشمند خواتین بھی اس سلسلے میں خاصی فکر مند ہونے لگتی ہیں کہ انھیں اب کیسی غذا لینی چاہیئے۔
گرمیوں میں چونکہ انسانی جسم کو کم کیلوریز کی ضرورت ہوتی ہے اورزیادہ گرمی انسانی جسم میں پانی کی کمی جیسے مسائل پیدا کرتی ہےجو ہمارے میٹا بولزم پر اثرانداز ہوتا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ گرمی میں بغیر ورزش انسانی جسم سے پسینہ ، سانس لینے سمیت فاضل مادوں کا اخراج روزانہ10کپ پانی ضائع کرنے کا سبب بن جاتا ہے۔اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ خواتین سمر کا ڈائٹ پلان کیسے مرتب کریں جو انھیں ایک طرف پانی کی کمی جیسے مسائل سے دور رکھے تو دوسری جانب ان کی ڈائٹنگ پر بھی اثر انداز نہ ہو ۔آئیے پھر بات کرتے ہیں موسم گرما میں خواتین کے ڈائیٹ پلان پر ،کہ انھیں گرم موسم میں ناشتہ ،دوپہر کا کھانا یا پھر رات کا کھانا کیسا لینا چاہئیے اور کتنی کیلوریز لینی چاہئیں۔
صبح کا ناشتہ
کوئی مجبوری ہو یاڈائٹنگ ،طبی ماہرین ازخود ناشتہ چھوڑنے کا مشورہ نہیں دیتے ۔ان کے نزدیک ناشتہ نہ کرنا انسانی صحت پر منفی اثرات مرتب کرتا ہے۔رات کے طویل آرام کے بعد جب انسان نیند سے بیدار ہوتا ہے تو اس کا مطلب یہ ہے کہ انسانی جسم میں موجود مشینری سسٹم 12 گھنٹوں سے بغیر کسی ایندھن کام کررہا تھا اب فوری طور پر اسے ایندھن درکار ہے ۔ جسم کو ایندھن نہ ملنے کے باعث آپ کے خون میں گلوکوز کی کمی ہو جاتی ہے۔موسم گرما میں چونکہ انسان کو کم کیلوریز والی غذائیں لینی چاہئیںچنانچہ صبح ناشتے میںخواتین کے لئے270کیلوریزکا ہونا ضروری ہے ۔اس کا مطلب ہے کہ وہ غذائیں لی جائیں جن میں کم ازکم 270 کیلوریز لازمی موجود ہوںیہاں دوقسم کے ناشتوں کا چارٹ موجود ہے جنھیں موسم گرما میں خواتین اپنی پسند کے مطابق اپنا سکتی ہیں۔
1۔آملیٹ
تین انڈے
چاپ کی ہوئی سبزیاں((مثال کے طور پر، پیاز، مشروم، ٹماٹر)
ا یک کپ فروٹ سلاد
ان کیلوریز کے ساتھ لیے گئے ناشتے میں خواتین عام خواتین کی نسبت 65فیصد زیادہ جلدی وزن میں کمی لاسکتی ہیں۔
2۔اسمارٹ اسمودی
3/4کپ کم بالائی والا دہی
1/2کپ اسکیمڈ ملک
1 کیلا
1/2کپ تازہ یا جمی ہوئی بیریز۔
سمودی ایک صحت بخش غذاہے۔یہ مختلف پھلوں،سبزیوں،دودھ،دہی،برف اورپانی وغیرہ پرمشتمل اجزاء کوبلینڈر میں بلینڈ کرنے کاجدید تصورہے۔اس میں استعمال کیے جانے والے مختلف پھل میگنیشیم اورپوٹاشیم کے حصول کابہترین ذریعہ ہیں۔اس میں دودھ کے استعمال سے کیلشیم اورپوٹاشیم بھی مل جاتاہے۔اسی لئے اسمودی کی بدولت جسم میں الیکٹرولائٹس کومتوازن رکھاجاسکتاہے۔
دوپہر کا کھا نا
ڈائٹنگ کا صحیح مطلب خود پر بڑھے ہوئے وزن کو لےکر ذہنی دباؤ ڈالنا نہیں بلکہ صحت کے اصولوں پر عمل کرنا ہے موسم گرما میںماہرین دوپہر کے کھانے کے لئے 360کیلوریز اپنانے کا مشورہ دیتے ہیں۔
1/2کپ کین ٹونا فش
دو ٹیبل اسپون (10ملی گرام)کم کیلوریز والامایو
دو سلائس (گندم )
1/3کپ یا 75ملی گرام کم کیلوریز والی پنیر
ٹونا مچھلی میں مایو مکس کرلیں اور سلائس، ٹماٹر ،پیاز اور پنیر کے ساتھ استعمال کی جاسکتی ہیں ۔
رات کا کھانا
115گرام ،لین بیف یا چکن
سبزی کی ترکاری گاجر،بروکولی،،مرچ اور گوبھی
تریاکی ساس
ایک کپ براؤن رائس
پی میں تھوڑا سا آئل ڈال کر تمام چیزیں ہلکی سا براؤن کرلیں اس میں ساس بھی شامل کرلیں پاستا یا چاول کے ساتھ استعمال کیے جاسکتے ہیں۔
مشروبات
شدید گرمی اور بڑھتا درجہ حرارت نہ صرف انسانی صحت بلکہ انسان کےموڈکو بھی خاصا متاثر کرتا ہے جس کے باعث جسم میں پانی کی کمی، چڑچڑاپن ،نیند کی کمی اور تھکن جیسے مسائل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔گرمی سے چھٹکارا حاصل کرنے اور ہلکے پن و ٹھنڈک کے احساس کو برقرار رکھنے اس موسم کے حساب سے درست غذاؤں کا انتخاب ضروری ہوتا ہے جو کہ آپ کو جسمانی طور پر مضبوط بناتا ہے۔آئیے ذکر کرتے ہیں موسم گرما کے ان مشروبات کا جو دوران ڈائٹنگ بھی خواتین بآسانی استعمال کرسکتی ہیں۔٭پانی اور کلب سوڈا٭لیموں پانی٭بغیر چینی کی چائے٭ لیمن ٹی یاگرین ٹی ٭بلیک کافی

صحت

علاج دریافت

شائع شدہ

کو

علاج دریافت

ایک تحقیق کے مطابق انسانی اعصابی خلیات کو بجلی سے کنٹرول کرنے سے دمے، جوڑوں کی سوزش اور ذیابیطس جیسی بیماریاں ٹھیک ہو سکتی ہیں۔
یہ تحقیق امریکا میں واقع ’گلوانی بائیو الیکٹرانکس‘ نامی کمپنی نے کی ہے اور اسے امید ہے کہ وہ اس طریق کار پر مبنی علاج کو سات برسوں کے اندر منظوری کے لیے متعلقہ ادارے کے سامنے پیش کر دے گی۔گلیکسو سمتھ کلائن، ویرلی اور لائف سائنسز کی مشہور کمپنیاں بھی اس تحقیق میں شامل ہیں۔
تحقیق میں جانوروں پر کیے گئے تجربات میں انھیں سیلکون کے کف لگائے گئے جن میں الیکٹروڈ نصب تھے اور اس کے بعد بجلی کے ذریعے اعصاب کے پیغامات کنٹرول کیا گیا۔ کچھ تجربات کے نتائج میں سامنے آیا کہ اس طریقے سے ٹائپ ٹو ذیابیطس کا علاج کیا جا سکتا ہے جس میں جسم انسولین ہارمونز کو نظرانداز کرنا شروع کر دیتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

گھریلو شربت صحت کیئے مفید

شائع شدہ

کو

گھریلو شربت صحت کیئے مفید

ماہرین غذائیات کا کہنا ہے کہ نڈھال اور نحیف جسم کو توانائی کی فراہمی کےلیے ایک گلاس پانی میں ایک چمچہ چینی ملا گھریلو مشروب بہترین حل ہے۔رپورٹ کے مطابق ٹیٹرا پیک جوس، کولڈ ڈرنکس اور انرجی ڈرنکس کے مقابلے میں گھر میں تیار کردہ مشروب جس میں ایک گلاس پانی میں ایک چمچہ چینی ملائی جائے تو وہ زیادہ مفید ہے۔ ٹیٹرا پیک ڈرنکس صحت کےلیے نقصان دہ ہوسکتی ہیں اور جیب پر بھی بھاری ثابت ہوتی ہیں تاہم گھریلو مشروب اس سے زیادہ توانائی رکھتا ہے۔ہمارا جسم توانائی حاصل کرنے کےلیے کاربوہائیڈریٹس کو نظام ہاضمہ کے ذریعے توانائی سے بھرپور گلوکوز میں تبدیل کرتا ہے۔ تاہم اس عمل میں دو سے تین گھنٹے لگ سکتے ہیں چنانچہ فوری توانائی حاصل کرنے کےلیے انرجی ڈرنکس کا استعمال کیا جانے لگا ہے لیکن ان کے مضر اثرات کے باعث ماہرین انرجی ڈرنکس کے استعمال سے منع کرتے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

موٹاپے سے جلد نجات دلائیں

شائع شدہ

کو

موٹاپے سے جلد نجات دلائیں

جب آپ جسمانی وزن میں کمی یا موٹاپے سے نجات پانے کی کوشش کررہے ہوں تو مخصوص غذاﺅں اور ورزش پر ہی انحصار نہیں کریں، بلکہ چند مشروبات سے بھی مدد لے سکتے ہیں۔ اگرچہ اچھی غذا جسمانی وزن میں کمی کے لیے فائدہ مند ثابت ہوتی ہے مگر چند مشروبات کا اضافہ اس مقصد کے حصول کے لیے زیادہ موثر ثابت ہوسکتا ہے۔ یہ مشروبات نظام ہاضمہ کے لیے بہترین ہوتے ہیں اور جب ہاضمہ ٹھیک ہو تو موٹاپے سے نجات میں کامیابی آسان ہوجاتی ہے۔ یہ مشروبات جسم میں زہریلے مواد کو نکال باہر کرتے ہیں جبکہ میٹابولزم کو بھی بہتر کرتے ہیں۔اور اچھی بات یہ ہے کہ ان مشروبات کی تیاری کا سامان آپ کے کچن میں ہی موجود ہے۔
لیموں اور ادرک کا مشروب
یہ جادوئی مشروب جسمانی وزن میں کمی کے لیے انتہائی موثر ثابت ہوسکتا ہے، آدھے لیموں کو نیم گرم پانی سے بھرے گلاس میں نچوڑیں اور پھر اس میں کدو کش کی گئی ادرک کی کچھ مقدار کا اضافہ کردیں۔ ہر صبح نہار منہ اس مشروب کا استعمال کریں اور ایک سے 2 ماہ بعد اپنے وزن کو چیک کریں۔ دار چینی اور شہد
ایک چمچ شہد اور آدھا چائے کا چمچ دارچینی ایک گلاس گرم پانی میں ملا کر مکس کریں، اس میں اگر لیموں کے عرق کا اضافہ کردیا جائے تو چربی گھلانے کا عمل تیز کرنے میں مزید مدد مل سکتی ہے۔ دار چینی بے وقت بھوک کی روک تھام کرتی ہے جبکہ شہد میٹابولزم کو بہتر کرتا ہے۔ کھیرے اور پودینے کا مشروب
پانی سے بھرے ایک جگ کو لے کر اس میں کھیرے کے چند ٹکڑے اور پودینے کے پتوں کو ڈال دیں، اس کے بعد جگ کو کچھ دیر کے لیے چھوڑ دیں اور پھر سارا دن اس مشروب کو پیتے رہیں۔ یہ مشروب نہ صرف جسم میں موجود زہریلے مواد کو خارج کرتا ہے بلکہ اس کا ذائقہ بھی بہت اچھا ہوتا ہے اور ہاں نظام ہاضمہ بھی بہتر ہوتا ہے۔ سبز چائے
یہ کیلوریزفری مشروب ہے اور اس میں موجود اینٹی آکسائیڈنٹس اوردیگر اجزاءجسم میں فری ریڈیکلز بننے کے عمل کی روک تھام کرتے ہیں، جبکہ جسم کے اندر چربی گھلانے والے عمل کو متحرک کرکے کچھ عرصے میں موٹاپے سے نجات دلانے میں بھی مدد دیتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں