Connect with us

پاکستان

پاک،افغان رضامند

شائع شدہ

کو

پاک،افغان رضامند

پاکستان اور افغانستان کے درمیان امن و یکجہتی کے لیے اقدامات پر اتفاق کیا گیا ہے اور امن و استحکام کے لیے پاک افغان پلان آف ایکشن کو بھی حتمی شکل دے دی ہے۔ پاکستان اور افغانستان کے سفارتی وفود کی ملاقات اسلام آباد میں ہوئی جس میں پاکستانی وفد کی قیادت سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے کی جب کہ افغان وفد کی قیادت نائب وزیر خارجہ حکمت خلیل کرزئی نے کی۔ ملاقات میں دو طرفہ امور اور علاقائی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں وفود کی ملاقات کے بعد مشترکہ اعلامیہ بھی جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی سے افغان صدر کی گزشتہ ماہ ملاقات کے نتیجے میں مذاکرات ہوئے ہیں۔ اعلامیے میں کے مطابق پاکستان اور افغانستان میں امن ویکجہتی کے لیے اقدامات پر اتفاق کیا گیا اور پاک افغان ایکشن پلان کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ پلان آف ایکشن دو طرفہ مسائل کے حل کا ایک مکینزم ہے جس کے تحت پاکستان اور افغانستان میں اعتماد بڑھے گا۔ اعلامیے کے مطابق مشترکہ مقاصد کے حصول اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے بھی پلان آف ایکشن پر عمل درآمد پر اتفاق کیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے 6 اپریل کو افغانستان کا دورہ کیا تھا جس میں باہمی تعلقات، دہشت گردی کے خلاف جنگ اور علاقائی روابط بڑھانے پر تبادلہ خیال ہوا تھا۔ ملاقات میں افغان امن مذاکرات، افغان مہاجرین کی واپسی، ریل روڈ منصوبوں اور دونوں ممالک کے درمیان قیدیوں کے تبادلے پر بھی تبادلہ خیال ہوا تھا۔

پاکستان

100 دن کاپروگرام لفظی مجموعہ

شائع شدہ

کو

100 دن کاپروگرام لفظی مجموعہ

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے تحریک انصاف کا پہلے 100 دن کا پروگرام جھوٹے دعوو¿ں اور لفاظی کا مجموعہ قرار دے دیا۔ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی جانب سے حکومت ملنے کی صورت میں 100 دن کے پلان کا اعلان کیا گیا جس پر مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے بھی شدید تنقید کی۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ایک کروڑ نوکریوں، 50 لاکھ گھروں کا دعویٰ، ایک ارب درخت اور 350 ڈیموں کی مانند سراب ہے، تحریک انصاف کا پہلے 100 دن کا پروگرام جھوٹے دعووں اور لفاظی کا مجموعہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ احتساب کانعرہ لگانے والوں نے کے پی میں اپنا بنایا احتساب کمیشن بھی نہ چلنے دیا، خیبر بینک کی تباہی عمران کے دور میں ہی ہوئی۔سعد رفیق کا کہناتھاکہ عمران کی حکومت میں خیبرپختونخوا پولیو کا گھر بن گیا، صوبائی حکومت نے ڈینگی کا مقابلہ کیے بغیر شکست مان لی جب کہ پشاور کے آدم خور چوہے بھی عمران کی حکمرانی کو کاٹ رہے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بیانات ریکارڈ

شائع شدہ

کو

بیانات ریکارڈ

ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے احسان صادق کی سربراہی میں قائم پانچ رکنی تحقیقاتی ٹیم اصغر خان کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف ،جاوید ہاشمی ،یونس حبیب اور دیگر کے بیانات رواں ہفتے قلمبند کرے گی ،یہ ٹیم سابق آرمی چیف اسلم بیگ اور سابق ڈی جی آئی ایس آئی اسد درانی کے بیانات ریکارڈ کر چکی ہے ،90کی دہائی میں آئی ایس آئی کی طرف سے سیاستدانوں میں رقوم کی تقسیم کے الزام میں سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کو اصفر خان کیس کی تحقیقات کر کے رپورٹ جمع کرانےکی ہدایت کر رکھی ہے۔ ڈی جی ایف آئی اے نے کیس کی تحقیقات کے لئے ایف آئی اے افسروں پر مشتمل 5 رکنی کمیٹی قائم کر رکھی ہے۔کمیٹی کے سربراہ ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے احسان صادق ہیں جبکہ کمیٹی ارکان میں ڈائریکٹر ایف آئی اے پنجاب ڈاکٹر عثمان انور،ڈائریکٹر انٹرپول طارق نواز ملک۔ڈائریکٹر امیگریشن ڈاکٹر رضوان اور ڈائریکٹر لاء علی شیر جاکھرانی شامل ہیں۔ ڈائریکٹر پنجاب عثمان انور کمیٹی کے سیکرٹری کا کام کر رہے ہیں۔ کمیٹی اصغر خان کیس کے تمام کرداروں کو طلب کر کے ان کے بیانات ریکارڈ کرے گی جبکہ کیس سے متعلقہ ریکارڈ کی چھان بین کرے گی۔ کمیٹی اپنے کام سے متعلق ڈی جی ایف آئی اے کو باقاعدگی سے آگاہ کر رہی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ملزم کراچی میں پکڑا گیا

شائع شدہ

کو

ملزم کراچی میں پکڑا گیا

خوشاب میں کم عمر بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزم امجد کا سراغ لگ گیا, کراچی میں گرفتار سیریل ریپسٹ کا ڈی این اے میچ کرگیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق ڈی جی فرانزک اشرف طاہر نے ملزم امجد علی کا ڈی این اے میچ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزمان نے 2017ءمیں خوشاب اور2018ءمیں کراچی میں بچیوں کو ہوس کا نشانہ بنایا۔ کراچی میں ہونے والی زیادتی کے کیس میں ملزم اور متاثرہ بچی کے ڈی این اے ٹیسٹ کیلئے نمونے فرانزک کو بھجوائے گئے تھے۔ ٹیسٹ کی رپورٹ میں ملزم کا ڈی این اے خوشاب اور کراچی میں بچیوں سے زیادتی کے کیس میں میچ کرگیا ہے جبکہ ڈی این اے رپورٹ بھی متعلقہ افسران کو ارسال کردی گئی ہے۔ واضح رہے کہ 2017ءمیں خوشاب میں بچی سے زیادتی کے جرم میں پولیس نے سجاد نامی شخص کو گرفتارکیا تھا، اس کا ڈی این اے میچ نہیں ہو اتھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں