Connect with us

کھیل

تاحیات پابندی

شائع شدہ

کو

تاحیات پابندی

سعودی فٹ بال فیڈریشن نے معروف ریفری فہد المرداسی پر رشوت لینے کے جرم میں تاحیات پابندی عائد کرتے ہوئے فیفا کو روس میں ہونے والے ورلڈ کپ 2018 کے ریفریز پول سے ان کا نام خارج کرنے پر زور دیا ہے۔فہد المرداسی نے ایک روز قبل ہی اعتراف کیا تھا کہ انھوں نے ایک میچ کے نتیجے کو بدلنے کے لیے رشوت لیا تھا جس کے بعد انھیں معطل کردیا گیا تھا۔ سعودی عرب سے تعلق رکھنے والے 32 سالہ ریفری مقبول ترین ریفری ہیں جنھیں 2011 میں فٹ بال کی عالمی تنظیم فیفا نے اپنے پول میں شامل کیا تھا جس کے بعد انھوں نے برازیل میں ہوئے 2016 ریو اولمپکس اور 2017 میں روس میں کنفیڈریشنز کپ میں اپنے فرائض انجام دیے تھے۔ رپورٹ کے مطابق فیفا کا کہنا تھا کہ وہ اس معاملے کو دیکھ رہے ہیں اور اس کے لیے مزید معلومات درکار ہیں۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ ‘سعودی عرب کی فٹ بال فیڈریشن کی جانب سے فہد المرداسی پر فٹ بال سے متعلق سرگرمیوں پر تاحیات پابندی کے حوالے سے معلومات کو فیفا دیکھ رہی ہے’۔ فیفا نے مزید کسی بیان سے قبل سعودی فٹ بال فیڈریشن سے مزید معلومات دینے کی درخواست کی ہے۔ خیال رہے کہ فہد المرداسی کو سعودی عرب میں ہونے والے کنگز کپ کے فائنل میں مدمقابل سرفہرست کلب الفیصلے اور الاتحاد کی ٹیموں کے میچ میں ریفری مقرر کیا گیا تھا تاہم میچ سے دو دن قبل ہی انھیں سزا سنا دی گئی ہے۔ سعودی عرب کی فٹ بال فیڈریشن کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ انضباطی کمیٹی کی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ فہد المرداسی نے الاتحاد کے صدر سے رابطہ کرکے رشوت کے عوض ان کی ٹیم کو جتوانے کا کہا تھا جس کے بعد معاملہ فیڈریشن کو بھیج دیا گیا۔
سعودی فٹ بال فیڈریشن نے الاتحاد کے صدر حماد الثانیا کو طلب کر کے ریفری کی پیش کش کے حوالے سے ثبوت مانگے گئے، فہد نے ان کے ساتھ وٹس ایپ کے ذریعے رابطہ کیا تھا اور رشوت کے بدلے میچ میں ٹیم کی مدد کا کہا تھا۔ فہد المیرداسی کا معاملہ فٹ بال فیڈریشن سے سعودی عرب کی کھیلوں کی مجلس عاملہ کے پاس گیا جہاں تفتیش کی گئی۔ تفتیش کے دوران فہد نے جرم کا اعتراف کیا جس کے بعد انھیں تاحیات فٹ بال کی سرگرمیوں سے دور رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ فہد المرداسی ورلڈ کپ 2018 کے لیے شامل 5 عرب ریفریز میں سے ایک تھے۔

کھیل

2 غیرملکی کوچز کا تقرر

شائع شدہ

کو

2 غیرملکی کوچز کا تقرر

پاکستان ہاکی فیڈریشن نے قومی ٹیم کی پرفارمنس میں بہتری لانے کے لیے مزید دو غیر ملکی کوچز کی خدمات حاصل کرتے ہوئے پینالٹی کارنر اور گول کیپنگ کوچز کا تقرر کردیا ہے۔ہر گزرتے دن کے ساتھ بدحالی کی جانب سے قومی کھیل ہاکی کی بہتری کے لیے کچھ عرصہ قبل ہالینڈ کے رولینٹ اولٹمنز کی خدمات حاصل کی گئی تھیں اور اب کوچ کے مشور سے مزید دو کوچز کا تقرر کردیا گیا ہے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان کے پاس اوٹمنز کو تنخواہ دینے کے پیسے بھی نہیں اور فیڈریشن نے گزشتہ دنوں اسپورٹس بورڈ سے غیر ملکی ہیڈ کوچ کو تنخواہ دینے کے لیے 35 لاکھ روپے مانگے اور اس ابتر صورتحال میں ہیڈ کوچ نے خود پینالٹی کارنر اور گول کیپنگ کوچ کا تقرر کردیا۔
ڈچ شارٹ کارنر اسپیشلسٹ بریم لومنز پاکستانیوں کو پینالٹی کارنر سکھائیں گے جبکہ ڈینس فینڈر گول کیپرز کو ٹریننگ دیں گے اور دونوں کوچز قومی ٹیم کو ہالینڈ میں جوائن کریں گے تاہم یہ معمہ ابھی تک حل طلب ہے کہ ان کوچز کو تنخواہیں کس طرح ادا کی جائیں گی۔ واضح رہے کہ غیرملکی کوچز کی خدمات حاصل کرنے کے باوجود ہیڈ کوچ کا کہنا ہے کہ پاکستان کی چیمپیئنز ٹرافی میں فتح کے صرف 5فیصد امکانات ہیں۔ پاکستان ٹیم چیمپیئنز چیمپیئنز ٹرافی میں شرکت کے لیے جلد ہالینڈ روانہ ہو گی اور وہاں قومی ٹیم کا طویل کیمپ بھی لگے گا۔ چیمپیئنز ٹرافی سے پہلے قومی ٹیم آسٹریا سے تین میچز کی سیریز بھی کھیلے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

کھیل

50ایتھلیٹس لاپتہ

شائع شدہ

کو

50ایتھلیٹس لاپتہ

ہر مرتبہ کامن ویلتھ گیمز کے بعد غیرترقی یافتہ ملکوں کے کھلاڑی لاپتہ ہو جاتے ہیں اور اس مرتبہ آسٹریلیا میں ہونے والے کامن ویلتھ گیمز کے بعد بھی کم و بیش 50 ایتھلیٹس پھر سے لاپتہ ہو گئے ہیں۔ کامن ویلتھ گیمز کے بعد تقریباً 50 ایتھلیٹس آسٹریلیا میں غیرقانونی طور پر غائب ہو گئے ہیں جبکہ 200 سے زائد دیگر ایتھلیٹس کے پاس ویزا موجود ہے جو پناہ گزین کے طور پر درخواست دیں گے۔ گیمز کے بعد افریقہ سمیت دیگر خطوں سے تعلق رکھنے والے درجنوں ایتھلیٹس کے غائب ہونے کے بعد آسٹریلیا نے خبردار کیا تھا کہ وہ ان تمام لوگوں کو ملک بدر کر دیں گے جو غیرقانونی طور پر مقیم ہوں گے۔ محکمہ داخلہ کی ملیسا گولٹھلی نے سینیٹ کمیٹی کو بتایا کہ حکومت کا غائب ہونے والے ایتھلیٹس سے کوئی رابطہ نہیں ہو سکا لیکن ہمیں معلوم ہے کہ انہوں نے ملک نہیں چھوڑا اور ابھی بھی آسٹریلیا میں موجود ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مزید 205 میں سے 190ایتھلیٹس اور آفیشلز نے قانونی طریقے سے ویزا کے حصول کے لیے درخواست دی ہے جبکہ بقیہ افراد کاروباری یا دیگر کاموں کی وجہ سے ویزا کی درخواست دے رہے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

کھیل

ایوارڈ لے اڑے

شائع شدہ

کو

ایوارڈ لے اڑے

سپر سٹار لیونل میسی نے پانچویں بار یورپیئن گولڈن شو کا اعزاز حاصل کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق فٹبال کی دنیا کے بڑے نام لیونل میسی کے لیے ایک اور بڑا ایوارڈ، بارسلونا سٹار نے پانچویں بار یورپیئن گولڈ شو ایوارڈ جیت لیا۔ میسی کے اس اعزاز کا فیصلہ سپینش لیگ لالیگا کے فیصلہ کن میچ میں بارسا کی ایک صفر سے فتح پر ہوا۔ لیونل میسی نے سیزن میں چونتیس گول سکور کیے۔میسی فٹبال سیزن دوہزار سترہ اٹھارہ میں اڑسٹھ پوائنٹس کے ساتھ ٹاپ پر ہے، ارجنٹائنی سٹار یورپیئن گولڈن شو ایوارڈ جیتنے کی ہیٹرک ہی نہیں بلکہ اس سے پہلے دوہزار چودہ، تیرہ، بارہ اور دوہزار دس یعنی چار بار یہ ایوارڈ اپنے نام کر چکے ہیں۔ یورپیئن گولڈ شو ایوارڈ کا حقدار جرمن، سپینش، انگلش، اٹالین اور فرنچ لیگز میں گولز اور زیادہ پوائنٹس حاصل کرنے والا قرار پاتا ہے۔ واضح رہے کہ یورپیئن گولڈن شو ایوارڈ کی دوڑ میں لیونل میسی کے علاوہ لیور پول کے محمد صالح اور ٹوٹنہم کے ہیری کین شامل تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں