Connect with us

انٹرنیشنل

فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت

شائع شدہ

کو

فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت

روس نے فلسطینیوں کے خلاف فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت کی ہے۔ روس کی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زاہارووا نے کہا ہے کہ ہم، امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے بیت المقدس منتقلی کے خلاف پُرامن مظاہروں کے دوران شہریوں کے خلاف اسرائیل کے فوجی طاقت کا استعمال کرنے کی مذمت کرتے ہیں۔ زاہارووا نے کہا کہ روس کی بیت المقدس پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔ بیت المقدس کو دو آزاد حکومتوں کی حیثیت سے فلسطین اور اسرائیل کا دارالحکومت ہونا چاہیے اور اسے تین سماوی ادیان میں سے ہر ایک کے لئے کھلا ہونا چاہیے۔
روس کے غزہ کی پیچیدہ ہوتی صورتحال پر شدید تشویش محسوس کرنے کا ذکر کرتے ہوئے زاہارووا نے فریقین سے اسے اقدامات سے پرہیز کرنے کی اپیل کی ہے کہ جن سے تناو میں مزید اضافہ ہونے کا خطرہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ ہم فلسطینیوں کے پُر امن مظاہروں کے حق کو قبول کرتے ہیں اور شہریوں کے خلاف فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں۔

انٹرنیشنل

سعودی عرب پرحملہ

شائع شدہ

کو

سعودی عرب پرحملہ

یمن سے سعودی شہر کو بیلسٹک میزائلوں سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تاہم ایک میزائل کو فضا میں ہی تباہ کردیا گیا جب کہ دوسرا میزائل صحرائی علاقے میں گرا۔ عرب میڈیا کے مطابق یمن سے سعودی شہر خمیس مشیط پر حوثی باغیوں کی جانب سے 2 بیلسٹک میزائل فائر کیے گئے جس میں سے ایک میزائل کو سعودی ائیر ڈیفنس فورسز نے فضا میں ہی تباہ کردیا جب کہ دوسرا میزائل شہر کے صحرائی علاقے میں گرا تاہم میزائل حملے میں کسی بھی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔ سعودی اتحادی فوج کے سربراہ کرنل ترکی المالکی نے میزائل حملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ روز یمن سے حوثی باغیوں نے سعودی وقت کے مطابق شام چھے بجے کے قریب میزائل حملہ کیا تاہم حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔
واضح رہے کہ گزشتہ کئی سالوں سے یمن کے حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب پر میزائل حملوں کا سلسلہ جاری ہے جب کہ امریکا اور سعودی عرب نے متعدد بار ایران پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ حوثی باغیوں کو میزائل ایران فراہم کررہا ہے لہذا اقوام متحدہ ایران کو سلامتی کونسل کی قراردادوں کا پابند کرے۔

پڑھنا جاری رکھیں

انٹرنیشنل

درندگی پر شرمندہ نہیں۔سفاک قاتل کا بیان

شائع شدہ

کو

درندگی پر شرمندہ نہیں۔سفاک قاتل کا بیان

امریکی ریاست ٹیکساس کے سانٹافے سکول میں فائرنگ کرکے 10 افراد کو موت کے گھاٹ اتارنے والے ملزم کا کہنا ہے اس نے بعض طلبہ کو اس لیے چھوڑ دیا تاکہ وہ اس کی کہانی سنا سکیں۔ملزم سکول پر حملے کیلئے 2 بم بھی لے کر آیا تھا لیکن وہ ناکارہ نکلے جس کی وجہ سے بہت بڑا نقصان ہونے سے بچ گیا۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق سانٹافے سکول میں فائرنگ کرکے پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ سمیت10 طلبہ کو موت کے گھاٹ اتارنے والے ملزم دمتریوس پگورٹزس پر ٹیکساس کی ایک عدالت میں مقدمہ شروع ہو گیا ہے۔عدالت میں پیش کیے جانے والے ایک حلف نامے کے مطابق 17 سالہ پگورٹزس اپنے خاموش رہنے کے حق سے دستبردار ہو گئے اور تسلیم کیا کہ انہوں نے متعدد لوگوں کو گولیاں ماری ہیں۔پگورٹزس پر قتل اور پولیس پر حملے کے الزامات ہیں اور اسے ان الزامات پر سزائے موت ہو سکتی ہے۔عدالت میں جمع کرائے گئے حلف نامے میں درج ہے کہ پگورٹزس کے پاس ایک ریمنگٹن 870 شاٹ گن اور 0.38 کیلبر کا پستول تھا جبکہ وہ 2 بم بھی لے کر آیا تھا جو ناکارہ نکلے۔ملزم نے خود کو پولیس کے حوالے کرنے سے پہلے پولیس کے ساتھ 15 منٹ تک مقابلہ بھی کیا جس کے بعد اس نے خود کو مارنے کا ارادہ ملتوی کرکے خود کو پولیس کے حوالے کردیا۔مجھے کوئی شرمندگی نہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

انٹرنیشنل

ایک کھرب 36 ارب کا فائدہ

شائع شدہ

کو

ایک کھرب 36 ارب کا فائدہ

برطانوی شہزادے ہیری ہفتے کے روز شادی کے بندھن میں بندھ گئے ،شاہی جوڑے کی کی تقریب قلعہ ونڈسر کے سینٹ جارج چیپل میں منعقد ہوئی جس میں دنیا بھر سے 600 سے نمایاں شخصیات کو مدعو کیا گیا تھا۔خبررساں ادارے کے مطابق شاہی شادی پر 45.8 ملین امریکی ڈالر (تقریباً 5؍ ارب 29؍ کروڑ 86لاکھ پاکستانی روپے )خرچ ہوئے۔ 2011ء میں ہیری کے بھائی شہزادہ ولیم اورشہزادی کیٹ میڈلٹن کی شادی پر قریباََ 34 ملین امریکی ڈالر خرچ ہوئے تھے جس میں 8.7 ملین ڈالر صرف سکیورٹی پر خرچ ہوئے اور مقررہ وقت سے زائد ڈیوٹی کرنے پر پولیس کو 4.9 ملین ڈالر اضافی ادا کیے گئے۔ اثاثہ جات کا حساب کتاب رکھنے والی بین الاقوامی ایجنسی ’’ میسرز برانڈ فنانس ‘‘ کے مطابق شاہی شادی کی وجہ سے سیاحت، ٹی وی براڈکاسٹ اور ہوٹلنگ کی مد میں برطانوی معیشت کو ایک ارب یورو (1.346 ارب امریکی ڈالر) یا (ایک کھرب 36؍ ارب 40؍ کروڑ پاکستانی روپے )کا فائدہ ہوا۔ اخراجات شاہی خاندان نے ادا کیے۔
اخراجات شاہی خاندان نے اپنے پاس سے کیے۔ میگھن مرکل نے دوہرےبند کا ریشمی لباس زیب تن کیا،جو فرانسیسی فیشن ہائوس ’’ کیوانچے‘‘ کی برطانوی فیشن ڈیزائنر کلئیر ویٹ کیلر نے ڈیزائن کیا،اور اسکی قیمت 5 لاکھ ڈالر سے 6 لاکھ ڈالر (6؍ کروڑ 94لاکھ پاکستانی روپے ) کے درمیان تھی۔ 2011ء میں کیٹ مڈلٹن کے لباس پر 4 لاکھ 34ہزار ڈالر خرچ ہوئے تھے۔ ڈیزائنر کیلر نے دلہن کے لباس پر دولت مشترکہ کے تمام 53 ممالک کے قومی پھولوں کو ملا کر دیدہ زیب ڈیزائن بنایا۔ دلہن کا نقاب باریک ریشمی جالی سے تیار کیا گیا جو پانچ میٹر لمبا تھا اور اس پر ریشمی دھاگے سے کشیدہ کاری کرکے پھول بنائے گئے تھے، باریک ریشمی جالی سے نقاب تیار کرنے میں کئی گھنٹے صرف ہوئے اور ورکر ز ہر آدھے گھنٹے بعد ہاتھ دھوتے تھے تاکہ ریشم کا کام بالکل اصلی لگے۔شادی کے دن ونڈسر کیسل گرائونڈ میں 2640 مہمان موجود تھے، یہ جگہ 150 سال سے شاہی شادیوں کیلئے استعمال ہو رہی ہے ، 1863 ء میں ملکہ وکٹوریہ کے بیٹے شہزادہ البرٹ ، ایڈورڈ ہفتم اورشہزادی الیگزینڈرا تک سب شادیاں یہاں ہوئیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں