Connect with us

پاکستان

4 ہزار پاکستانی دوسرے ملکوں کے حوالے

شائع شدہ

کو

4 ہزار پاکستانی دوسرے ملکوں کے حوالے

سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف نےکم و بیش 4 ہزار پاکستانی شہری دوسرے ملکوں کے حوالے کیے، جن میں سب سے زیادہ شہری امریکا کے حوالے کیے گئے۔ یہ اعتراف جسٹس (ر)جاوید اقبال نے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال، جو قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین بھی ہیں، نے بتایا کہ مشرف حکومت نے پاکستانیوں کے بدلے امریکی ڈالر لیے۔ بریفنگ کے دوران جسٹس (ر) جاوید اقبال نے بتایا کہ پاکستانیوں کو دوسرے ممالک کے حوالے کرنے کی 'خفیہ کارروائی' میں سابق وزیر داخلہ آفتاب شیرپاؤ بھی شریک رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک کے قانون میں ایسی بے دخلی کے بارے میں کوئی شق نہیں اور نہ ہی پارلیمنٹ سمیت کسی کی بھی جانب سے پرویز مشرف اور آفتاب شیرپاؤ کی ان کارروائیوں پر آواز اٹھائی گئی۔ یاد رہے کہ پرویز مشرف نے 12 اکتوبر 1999ء کو ملک میں فوجی قانون نافذ کرنے کے بعد اُس وقت کے وزیراعظم نواز شریف کو جبراً معزول کردیا تھا، بعدازاں وہ ملک کے دسویں صدر منتخب ہوئے اور 18 اگست 2008 تک اس عہدے پر براجمان رہے۔ 11 ستمبر 2001ء کو امریکی ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملوں کے بعد 13 ستمبر 2001ء کو مشرف نے امریکا کے مطالبات تسلیم کیے اور یوں پاکستان، امریکی جنگ میں باقاعدہ طور پر شامل ہو گیا۔ اس جنگ کے دوران پرویز مشرف نے امریکی ہدایات پر 689 افراد کو گرفتار کیا جن میں سے 369 افراد بشمول خواتین کو امریکا کے حوالے کیا گیا اور اس کے عوض امریکا سے کئی ملین ڈالرز کے انعام وصول کیے۔ اس بات کا اعتراف انہوں نے اپنی کتاب 'اِن دی لائن آف فائر' (In The Line Of Fire) میں بھی کیا۔

پاکستان

میڈیا ٹیم سے تعلق ختم

شائع شدہ

کو

میڈیا ٹیم سے تعلق ختم

سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے بیانئے میں بڑا اختلاف سامنے آیا ہے اور مریم نواز کی میڈیا ٹیم کو عملی طور پر غیر فعال کر دیا گیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق مریم نواز شریف کی میڈیا ٹیم کو عملی طور پر غیر فعال کرتے ہوئے مریم اورنگزیب سمیت کئی شخصیات کو سخت بیان بازی سے روک دیا گیا ہے۔ جس کے بعد مریم اورنگزیب نے بھی اب ووٹ کو عزت دو کی بجائے ترقیاتی کاموں کا بیانیہ اپنا لیا ہے جبکہ مریم نواز کی قریبی سیاسی شخصیات بھی میڈیا ٹیم سے لاتعلق ہوگئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

تبادلے و تقرریاں مذاق

شائع شدہ

کو

تبادلے و تقرریاں مذاق

سندھ کی نگران حکومت کے تبادلے و تقرریاں مذاق بن گئے۔ آئی جی جیل خانہ جات، ڈی آئی جی جیلز کراچی اور 8جیل سپریٹنڈنٹس کے تبادلوں کے دو دن میں تین نوٹی فیکیشن جاری ہوئے جن میں سے ایک تعیناتی دوسرا اس کو روکنے اور تیسرا دوسرے والے نوٹی فیکیشن کو روکنے کے لیے جاری ہوا۔ تفصیلات کے مطابق منگل کی دوپہر کو تمام تبادلوں پر عملدرآمد کو محکمہ داخلہ نے روک دیا۔ اس سے قبل نئے آئی جی جیل خانہ جات عمران یعقوب منہاس کے چارج لینے کے بعد انوکھا واقعہ ہوا تھا۔ عمران یعقوب منہاس نے آئی جی جیل خانہ جات کا چارج گزشتہ روز صبح سنبھالا اور آئی جی جیل دفتر میں ملاقاتیں بھی کیں۔ اسی دوران کام سے روکے جانے پر انہوں نے کام چھوڑا، ڈی آئی جی جیلز تعینات کیے گئے ناصر آفتاب نے ابھی چارج نہیں سنبھالا تھا۔ ابھی یہ تذبذب بھی ختم نہیں ہوا کہ گزشتہ شب ایک بار پھر سروسز اینڈ ایڈمنسٹریشن ڈپارٹمنٹ کی جانب سے نوٹی فیکیشن جاری ہوا کہ نئے تعینات افسران اپنے کام کو جاری رکھیں اور جنھوں نے چارج نہیں لیا وہ چارج بھی لے لیں۔ اس مذاق کے بعد نئے تعینات افسران نے ایک بار پھر کام شروع کردیا ہے۔ ذرائع بتاتے ہیں کہ جیل کے تبدیل افسران طاقت ور تصور کیے جاتے ہیں خاص طور پر سابقہ آئی جی نصرت منگن۔ دوسری جانب یہ بھی حقیقت ہے کہ پاکستان کے کسی دوسرے صوبے مں جیل خانہ جات کے افسران کے تبادلے اور تقرریاں نہیں کی گئیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سیاست کھیل نہیں خدمت

شائع شدہ

کو

سیاست کھیل نہیں خدمت

خواجہ سعد رفیق نے کہا سیاست باکسنگ یا کرکٹ نہیں، سیاست خدمت کا نام ہے، کیا کراچی میں امن لانا، دہشت گردی ختم کرنا اور سی پیک لانا جرم ہے تو مسلم لیگ ن یہ جرم کرتی رہے گی۔ تفصیلات کے ن لیگی کے رہنما نے بھٹہ چوک کے قریب کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا عمران خان سیاست کے نئے کھلاڑی ہیں، ان کو پتا ہی نہیں سیاست کیا ہے مشرف دور میں نواز شریف کو طیارہ ہائی جیکنگ میں 14 سال قید سنائی گئی تھی، دھرنا دینا آسان کام ہے ہمارے لیڈر کو جیل میں ڈال دیا گیا‌ پھر بھی ہم نے سڑکیں بند نہیں کیں ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں