Connect with us

صحت

گھرمیں بنانے کی آسان ترکیب

شائع شدہ

کو

گھرمیں بنانے کی آسان ترکیب

چکن چیز رول گھر میں بنانے کی آسان ترکیب آپ بھی جانئے۔ چکن -250 گرام
نمک -1/2 چائے کا چمچہ ادرک لہسن کا پیسٹ -1/2 چائے کا چمچہ
پسی لال مرچ - 3/4 چائے کا چمچہ سویا سوس- 2 چائے کے چمچے
تیل-2 کھانے کے چمچے
چیڈرچیز -1/2 کپ
ہرادھنیا -4 کھانے کے چمچے
ہری مرچ -3 عدد
درمیانی پیاز-1 عدد
سموسہ پٹی -250 گرام
تیل- تلنے کیلئے ترکیب :
تیل گرم کر کے اس میں 1/2 چائے کا چمچہ ادرک لہسن کا پیسٹ ڈال کر فرائی کریں۔اب اس میں 250 گرام چکن ڈال کر اتنا بھونیں کہ اس کا رنگ تبدیل ہو جائے۔پھر اس میں 1/2 چائے کا چمچہ نمک، 3/4 چائے کا چمچہ پسی لال مرچ اور 2 چائے کے چمچے سویا سوس ڈال کر فرائی کریں۔اس کے بعد 1/2 کپ کدوکش چیڈر چیز اور 1 عدد باریک کٹی درمیانی پیاز ڈال کر اتنا پکائیں کہ چیز میلٹ ہو جائے۔اب اس میں 4 کھانے کے چمچے باریک کٹا ہر ادھنیا اور 3 عدد باریک کٹی ہری مرچ ڈال دیں۔پھر فلنگ کو ٹھندا کر لیں۔ اس کے بعد 250 گرام سموسہ پٹی میں فلنگ کو بھر کرلئی کے پیسٹ سے بند کریں اور فرائی کر لیں۔ آخر میں اسے کیچپ کے ساتھ سروکریں۔

صحت

ان کا بالکل فائدہ نہیں

شائع شدہ

کو

ان کا بالکل فائدہ نہیں

اگر آپ مچھلی کے تیل کے کیپسول اس توقع کے ساتھ کھاتے ہیں کہ اس سے دل کی صحت بہتر ہوگی تو بہتر ہے کہ یہ پیسے سبزیوں پر خرچ کریں۔
یہ دعویٰ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔ برطانیہ سے تعلق رکھنے والی ایسٹ Anglia یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ مچھلی میں موجود فیٹی ایسڈز جو کہ دل کے لیے فائدہ مند ہوتے ہیں، مچھلی کے تیل کے کیپسول کے سپلیمنٹ کی صورت میں کوئی فائدہ نہیں پہنچاتے۔
دنیا بھر میں لاکھوں بلکہ کروڑوں افراد مچھلی کے تیل کے کیپسول اس توقع کے ساتھ کھاتے ہیں کہ اس سے امراض قلب کو تحفظ مل سکے گا۔ محققین نے اس حوالے سے شواہد کا جائزہ لیا تاکہ جانا جاسکے کہ یہ امراض قلب، ہارٹ اٹیک یا فالج سے بچاﺅ میں کس حد تک مدگار ہے۔ نتائج سے معلوم ہوا کہ مچھلی کے تیل کے کیپسول ہارٹ اٹیک، فالج یا دیگر امراض قلب کے خطرے میں کوئی خاص کمی نہیں لاتے۔ درحقیقت انہوں نے دریافت کیا کہ اس سپلیمنٹ کا استعمال صحت کے لیے فائدہ مند کولیسٹرول کی سطح میں کمی لانے کا باعث بن سکتا ہے جس سے شریانوں کو نقصان پہنچنے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ محققین کا کہنا تھا کہ اومیگا تھری فیٹی ایسڈ کے سپلیمنٹ دل کی صحت کے لیے فائدہ مند نہیں یا ان کے استعمال سے فالج کا خطرہ کم نہیں ہوتا۔
اس سے قبل گزشتہ سال نیویارک یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ اومیگا تھری فیٹی ایسڈز کے فوائد کا حصول تیل کے کیپسول سے نہیں بلکہ مچھلی کھانے سے حاصل ہوتے ہیں۔اسی طرح امریکن میڈیکل ایسوسی ایشن کی ایک اور تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ مچھلی کے تیل کے کیپسول کا استعمال کسی قسم کے طبی فوائد کا حامل نہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

مریضوں کیلئے خوشخبری

شائع شدہ

کو

مریضوں کیلئے خوشخبری

بلند فشار خون یا ہائی بلڈ پریشر ایک ایسی بیماری ہے جو دیگر کئی امراض اور خطرات کو پیدا کرنے کا سبب بن سکتی ہے۔ یہ دماغ کی رگ پھٹنے یا دل کے دورے کا سبب بن سکتی ہے جس سے فوری طور پر موت واقع ہونے کا خدشہ ہوتا ہے۔
تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ کچھ غذائیں ایسی ہیں جن کے باقاعدہ استعمال سے ہم اپنا بلڈ پریشر قابو میں رکھ سکتے ہیں۔ اگر آپ ہائی بلڈ پریشر کے مریض ہیں تو آپ کو ان غذاؤں کا باقاعدہ استعمال کرنا چاہیئے۔
کیلا
مریضوں کیلئے خوشخبری
ماہرین کا کہنا ہے کہ روزانہ 2 کیلے کھانا آپ کے بلڈ پریشر کو معمول کی سطح پر رکھتا ہے، جبکہ 3 کیلے فالج سے بھی حفاظت فراہم کرتے ہیں۔ کیلوں میں پوٹاشیم کی بڑی مقدار موجود ہوتی ہے جو ان دونوں امراض سے حفاظت فراہم کرتی ہے۔ علاوہ ازیں یہ آسانی سے ہضم ہونے والی غذا ہے جو دن کے کسی بھی حصے میں کھائی جاسکتی ہے۔
تربوز
مریضوں کیلئے خوشخبری
تربوز میں موجود عناصر جسم کی مختلف رگوں کو آرام دہ حالت میں لاتے ہیں جس سے بلڈ پریشر نارمل رہتا ہے۔ طبی ماہرین کی تجویز ہے کہ ناشتے میں تربوز کا استعمال دن بھر آپ کو مختلف اقسام کے تناؤ سے محفوظ رکھتا ہے۔
خشک میوہ جات
مریضوں کیلئے خوشخبری
خشک میوہ جات کی مناسب مقدار جسم میں شوگر اور فشار خون کی سطح کو معمول کے مطابق رکھتی ہے تاہم اس کا زیادہ استعمال صحت کے لیے سخت نقصان دہ ہے کیونکہ یہ چکنائی سے بھرپور ہوتے ہیں۔
نارنگی
مریضوں کیلئے خوشخبری
سردیوں کا خاص پھل نارنگی نہ صرف قوت مدافعت کو مضبوط اور کئی بیماریوں سے تحفظ فراہم کرتا ہے بلکہ یہ بلڈ پریشر کو بھی قابو میں رکھتا ہے۔
دلیہ
مریضوں کیلئے خوشخبری
ماہرین کے مطابق ناشتے میں دلیہ کھانا جسم میں خون کی سطح کو معمول پر رکھنے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔ لیکن خیال رہے کہ اس کے لیے سادہ دلیہ استعمال کیا جائے، مختلف فلیورز کے دلیہ میں شوگر کی غیر ضروری مقدار شامل کی جاتی ہے جو جسم کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔
ٹماٹر
مریضوں کیلئے خوشخبری
کچے ٹماٹر کھانا نہ صرف بلڈ پریشر میں کمی کرتا ہے بلکہ یہ جلد کو بھی جوان اور خوبصورت رکھتا ہے اور جھریوں سے تحفظ فراہم کرتا ہے۔
گاجر
مریضوں کیلئے خوشخبری
گاجر میں موجود پوٹاشیم اور اینٹی آکسیڈنٹس بلڈ پریشر کو معمول کی سطح پر لانے کا اہم ذریعہ ہیں۔ گاجر کا جوس ہائی بلڈ پریشر کے مریضوں کے لیے نہایت فائدہ مند ہے۔
آلو
مریضوں کیلئے خوشخبری
زیادہ آلو کھانا ویسے تو موٹاپے کا سبب بنتا ہے لیکن یہ خون کے بہاؤ کو نارمل رکھتا ہے لہٰذا کبھی کبھار آلو کھا لینے میں کوئی حرج نہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

نیند 9 طرح کی

شائع شدہ

کو

نیند 9 طرح کی

آج کے دور کی مصروفیات نے نیند کا اوسط دورانیہ 6 گھنٹوں تک پہنچا دیا ہے (طبی ماہرین 7 سے 8 گھنٹے تک سونے کا مشورہ دیتے ہیں)۔
لگ بھگ ہر ایک کو اچھی نیند کی اہمیت کے بارے میں علم ہے مگر اکثر ایسا ہوتا ہے کہ سونے کی کوشش کرتے ہیں مگر نیند آنکھوں سے دور بھاگ جاتی ہے۔اگر آپ رات کی اچھی نیند چاہتے ہیں تو ان آسان طریقوں کو آزما کر دیکھیں اور بغیر ادویات کے بے خوابی کے عارضے سے نجات پائیں۔
ٹیکنالوجی ڈیوائسز دور کردیں
مانیں یا نہ مانیں مگر اسمارٹ فونز نیند کے سب سے بڑے دشمن ہیں اور اگر وہ آپ کے ہاتھ کی پہنچ میں ہو تو جلد سونے کا خیال ذہن سے نکال دینا چاہئے۔ ان ڈیوائسز سے خارج ہونے والی نیلی روشنی دماغ کو یہ احساس دلاتی ہے کہ ابھی سونے کا وقت نہیں ہوا، تو سونے سے قبل فون سائیلنٹ پر کردیں اور خود سے کچھ دور رکھ دیں۔
بستر سے نکل جائیں
اگر بستر پر لیٹنے کے بعد 20 منٹ تک نیند نہ آئے تو بستر سے باہر نکل جائیں اور دوسرے کمرے میں جاکر کچھ کرلیں، جیسے کوئی کتاب پڑھ لیں، جب غنودگی کا احساس ہو تو پھر واپس جاکر لیٹ جائیں۔
زیادہ ٹی وی نہ دیکھیں
اگر آپ بہت زیادہ ٹیلیویژن دیکھنے کے عادی ہیں تو یہ عادت بے خوابی اور جسمانی تھکاوٹ بڑھانے کا باعث بنتی ہے۔ لگاتار کئی گھنٹے ٹی وی کے سامنے بیٹھ کر سونے کے لیے جانا نیند آنے کو مشکل بناتا ہے تو اس سے بچیں۔
گرم دودھ اور شہد کا استعمال
رات کو سونے سے قبل ایک گلاس شہد ملا گرم دودھ بہترین نیند لانے کا زبردست گھریلو ٹوٹکا ہے۔ دودھ میں ایک امینو ایسڈ ٹرائیپٹوفان موجود ہوتا ہے جو ایک ہارمون سیروٹونین کی مقدار بڑھاتا ہے جو دماغ کو نیند کے سگنلز بھیجتا ہے۔ کاربوہائیڈیٹس جیسے شہد اس ہارمون کو تیزی سے دماغ میں پہنچاتے ہیں۔
نیند دوست ماحول بنانا
جو لوگ بے کوابی کے شکار ہو ان کے لیے پرسکون اور نیند والا ماحول بہتر ثابت ہوتا ہے، اس کے لیے موبائل فون اور لیپ ٹاپ سمیت تمام تر ڈیوائسز کو کمرے سے باہر یا کم از کم بستر سے دور رکھ دیں، کیونکہ ان پر آنے والے نوٹیفکیشن نیند میں مداخلت کا باعث بنتے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں