Connect with us

شوبز

مسلم فنکارمیدان میں

شائع شدہ

کو

مسلم فنکارمیدان میں

کینز فلم فیسٹیول میں ایک طرف تو خوبرو اداکارائیں اپنے حسن کے جلوئے بھکیرتے ہوئے نظر آئیں تو دوسری طرف لبنانی ادکارہ نے اس موقع پر فلسطینیوں پر اسرائیلی فوج کے مظالم کو اجاگر کرنے کے لئے بھرپور استعمال کیا، لبنانی اداکارہ منال عیسیٰ نے ایک پلے کارڈ اٹھا رکھا تھا جس پر یہ نعرہ درج تھا ’’غزہ پر حملہ بند کرو‘‘، انہوں نے اسٹار وارز اسٹوری کے پریمیئر کے موقع پر ریڈ کارپٹ پر چلتے ہوئے یہ پلے کارڈ اٹھا رکھا تھا۔ ہالی ووڈ کے اداکار بینیسیو ڈیل تورو نے بھی کانز فلم فیسٹیول میں اسرائیلی فوج کے قتل عام کیخلاف فلسطینیوں کے حق میں اس مظاہرے میں ان کا ساتھ دیا۔ جنوبی فرانس کے شہر کانز میں فلسطینی پویلین کے باہر درجنوں لوگ ایک دائرے میں ہاتھوں میں ہاتھ دیے کھڑے تھے۔ اس موقع پر فلسطینی فلم پروڈیوسر اور ڈائریکٹر مے اوڈے کا کہنا تھا کہ یہ ایک عجیب سے بات ہے کہ یہاں پر فلم بنانے والے اپنے مستقبل کے منصوبوں کے حوالے سے بات کررہے ہیں جبکہ ہمیں اپنے بچوں اور اہلخانہ کی فکر ہے جن پر اسرائیل حملہ آور ہے۔ یہ پہلی مرتبہ تھا کہ کانز فلم فیسٹیول میں فلسطینیوں کا اپنا ذاتی پویلین بھی تھا جہاں ممالک اپنی فلمی صنعت کے فروغ دینے کے لئے موجود ہوتے ہیں۔

شوبز

آخری وارننگ

شائع شدہ

کو

آخری وارننگ

پاکستان الیکٹرانک میڈیاریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے رٹ پٹیشن نمبر 4098/2013 سے متعلق مؤرخہ 9مئی 2018ء کے تحت جاری کردہ احکامات جن کے تحت تمام سیٹلائٹ ٹی وی چینلزپر پانچ وقت آذان نشر کرنا لازمی قرار دیا گیا تھا کی خلاف ورزی پر 45 ٹی وی چینلز کو حتمی انتباہ جاری کرتے ہوئے عدالتِ عالیہ کے احکامات پر فوری عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔بصورتِ دیگر تمام چینلز کو مطلع کیاگیا ہے کہ عدالتی احکامات پر عملدرآمد نہ ہونے کی صورت میں مزیدکسی تاخیر کے چینل کے لائسنس کی معطلی کیلئے کاروئی عمل میں لائی جائے گی۔ جن چینلز کو حتمی انتباہ جاری کی گئیں ہیں ان میں اے آر وئی نیوز، جیو نیوز، ایکسپریس نیوز، سماء ٹی وی، اب تک، جاگ، نیوز ون، کیپیٹل ٹی وی،دن نیوز، نیوٹی وی، چینل 24، سچ ٹی وی، چینل ۵، بول نیوز، 7نیوز، K21، کوہِ نور ، خیبر نیوز، مشرق ٹی وی ، رائل ٹی وی، راوی ٹی وی ، ہم نیوز، کے ٹو، آکسیجن، جیو انٹرٹینمنٹ، ایکسپریس انٹرٹینمنٹ ، اے آر وئی ڈیجیٹل، ہم ٹی وی، آج انٹرٹینمنٹ، ٹی وی ون، ہم ستارے، اے پلس، فلمیزیا، ایچ ٹی وی، سی ٹی وی، اے آر وئی زندگی ، جیو کہانی، جلوہ، 8ایکس ایم، سٹار ایشیا، پلے انٹرٹینمنٹ ، اپنا، پشتو1، آواز اور ذائقہ شامل ہیں ۔دریں اثناء اسلام آباد ہائیکورٹ کے مذکورہ فیصلہ کے تحت عدالتِ عالیہ نے ماہ رمضان میں تمام ٹی وی چینلز کو غیر ملکی مواد بالخصوص "انڈین" نشر کرنے پر پابندی عائد کی تھی جس کے بر عکس ’جیو کہانی‘اور’ فلمیزیا‘نے عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے یکم رمضان کو انڈین ڈرامے نشر کئے جن پر پیمرا نے دونوں چینلز کو اظہارِ وجوہ کے نوٹسز جاری کرتے ہوئے غیر ملکی مواد فوری طور پر بند کرنے کی ہدایت کی ہے۔ مزیدبرآں اتھارٹی نے’اے آر وئی ڈیجیٹل ’،ٹی وی ون اور بول نیوز پر عدالتی احکامات کے برخلاف لاٹری شوز دِکھانے پر اظہارِ وجوہ کے نوٹس جاری کرتے ہوئے مذکورہ پروگرام فوری بند کرنے کا حکم دیا ہے ۔ اتھارٹی نے تمام چینلز کوفوری طور پر عدالتی احکامات پر عملدرآمد یقینی بنانے کا حکم دیتے ہوئے مؤرخہ 25مئی 2018ء کو ہمراہ جواب ذاتی شنوائی کے لیے طلب کیا ہے۔
آخری وارننگ

پڑھنا جاری رکھیں

شوبز

جنگ لڑنے کا اعلان

شائع شدہ

کو

جنگ لڑنے کا اعلان

فلمسٹار لیلیٰ نے ایک بار پھر میرا کیخلاف اپنے حق کی جنگ لڑنے کا اعلان کر دیا اور 15لاکھ روپے سے زائد کی رقم واپس نہ کرنے پر میرا کیخلاف چیف جسٹس آف پاکستان کو درخواست دینے کا فیصلہ کر لیا۔ لیلیٰ نے اس حوالے سے بتایا میرا اب پاکستان سے امریکہ فرار ہونے کی کوشش کر رہی ہیں اس لئے میں نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ میں سپریم کورٹ میں درخواست دوں گی اور مطالبہ کروں گی جب تک وہ میرے پیسے نہیں دیتی۔ اس وقت تک میرا کو بیرون ملک جانے سے روکنے کیلئے اس کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

شوبز

اختلافات کی وجہ پیسہ

شائع شدہ

کو

اختلافات کی وجہ پیسہ

فلمسٹار وینا ملک اور اسد خٹک کے درمیان اختلافات کی وجہ ”پیسہ “ نکلا۔ ذرائع نے دعویٰ کیا کہ اسد خٹک نے شادی سے پہلے دینا ملک کو بیرون ملک اربوں روپے کی جائیدادیں ہونے کی یقین دہانی کروائی مگر شادی کے بعد یہ تمام باتیں جھوٹ کا پلندہ ثابت ہوئیں اور وینا ملک اپنے گھریلو اخراجات کیلئے بھی خود ہی شوبز سرگرمیوں کے ذریعے پیسہ کماتی رہی جبکہ اسد خٹک خامو ش تماشائی بنے رہے۔ جسکے بعد وینا ملک نے گھریلو اخراجات کیلئے پیسے نہ دینے پر اسد خٹک سے الگ ہونے کا فیصلہ کیا جس کی تصدیق وہ گزشتہ دنوں کر چکی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں