Connect with us

پاکستان

جلسہ میدان جنگ بن گیا

شائع شدہ

کو

جلسہ میدان جنگ بن گیا

کوئٹہ میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے خطاب کے دوران کارکن آپس میں لڑ پڑے جس کی وجہ سے عمران خان کو خطاب ادھورا چھوڑ کر واپس جانا پڑا۔

پی ٹی آئی بلوچستان کے زیر اہتمام میٹروپولیٹن کارپوریشن کے قریب ممبرشپ کیمپ کا انعقاد کیا گیا تھا اور عمران خان کو کیمپ کا افتتاح اور خطاب کرنا تھا۔عمران خان کیمپ میں پہنچے اور خطاب شروع کیا تاہم ابھی انہوں نے دو جملے ہی کہے تھے کہ پی ٹی آئی کے نور محمد دمڑ گروپ کے کارکنوں نے صوبائی قیادت کےخلاف نعرے بازی شروع کردی۔عمران خان نے کارکنوں کو روکنے کی کوشش کی تاہم صورتحال قابو سے باہر ہونے پر عمران خان خطاب ادھورا چھوڑ کر چلے گئے۔اپنے مختصر خطاب میں عمران خان نے کہا کہ آئندہ الیکشن میں پی ٹی آئی کی حکومت ہوگی۔بدنظمی کے بعد چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان خطاب چھوڑ کر واپس روانہ ہوگئے جس کے بعد پی ٹی آئی کارکنوں کا جھگڑا شروع ہوگیا۔عمران خان کے نہ رکنے پر کارکن دل برداشتہ ہوگئے اور پارٹی بینرز جلادیے، پی ٹی آئی کی صوبائی قیادت کےخلاف نعرے بھی لگائے جبکہ ایئرپورٹ روڈ پراحتجاج  کے دوران مشتعل کارکنوں نے عمران خان کی گاڑی پر کرسی بھی اچھالی۔

پاکستان

جگہ جگہ تلاشی

شائع شدہ

کو

جگہ جگہ تلاشی

25 جولائی کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے دوران کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لئے کراچی میں پولیس نے بھرپور تیاریاں کرلی ہیں اس حوالے سے پولیس اہلکاروں نے پریکٹس سیشن بھی کیا جس کے دوران غیر معمولی حالات اور شرپسند عناصرسے نمٹنے کے لئے خصوصی تربیت بھی شامل تھی-

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

نئے ڈیم کا اعلان

شائع شدہ

کو

اسلام کا پرچم بلند کرنا ہوگا

مولانا فضل الرحمٰن نے کہا عوام 25 جولائی کو ایم ایم اے کا ساتھ دے کر عام انتخابات میں کتاب پر مہر لگائیں گے۔ علاقے سے جاگیرداروں کا خاتمہ کر دیا اب یہاں کوئی ظلم نہیں کرسکتا۔ گومل زام ڈیم ہماری کوششوں سے منظور ہوا تھا اس بار جیتے تو ٹانک زام ڈیم بھی منظور کرائیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مخالف اتحاد نیا نہیں

شائع شدہ

کو

مخالف اتحاد نیا نہیں

خورشید شاہ نے کہا جب تک عوام ساتھ ہیں کوئی پیپلز پارٹی کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا، پختون، پنجابی، بلوچ، سندھی ہماری پہچان ہیں‌ جو ہماری پہچان کو گدھا کہتا ہے وہ سب سے بڑا گدھا ہے۔ کوئی کہتا تھا اس ملک میں بی بی نہ ہی نواز شریف آسکتا ہے مگر بی بی آئی، نواز شریف بھی آیا اور جمہوریت بھی آئی، پی پی کیخلاف کے اتحاد کوئی نئی بات نہیں آج پھر اتحاد بن گئے ہیں یہ کچھ نہیں کرسکتے- ہم نے 18 ویں ترمیم میں صوبوں کو بااختیار بنا دیا، 5 سال کا حساب دے سکتے ہیں، سیاست گالم گلوچ سے نہیں عزت سے ہوتی ہے سندھ دھرتی کیخلاف کوئی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

مقبول خبریں