پبلک پارک سے قیمتی ہیرا دریافت کرلیا گیا

امریکی استاد جان لینک کو دو گھنٹے کی تگ و دو کے بعد ایک عوامی پارک سے ہیرا ملا ہے جو اب ان کی ملکیت ہے

امریکی استاد جان لینک کو دو گھنٹے کی تگ و دو کے بعد ایک عوامی پارک سے ہیرا ملا ہے جو اب ان کی ملکیت ہے۔ 36 سالہ جان چھٹیاں گزارنے آرکنساس میں واقع مشہور ہیرے کے گڑھے (کریٹر آف ڈائمنڈز) میں آئے تھے۔ یہ ایک قومی پارک ہے جہاں ہیرے پائے جاتے ہیں اور معمولی فیس کے بعد کوئی بھی یہاں ہیرے کی تلاش میں اپنی قسمت آزما سکتا ہے۔ یہ پارک 37 ایکڑ پر پھیلا ہوا ہے جہاں مختلف لوگ ہیرے تلاش کرتے نظر آتے ہیں۔ جان کو صرف دو گھنٹے ہی گزرے تھے کہ ان کی نظر ایک چمک دار شے پر پڑی۔ جان نے اسے فوراً اٹھایا تو معلوم ہوا کہ یہ ایک ہیرا ہے جو ہلکے بھورے رنگ کا تھا۔ بعد میں معلوم ہوا کہ اس کا وزن 2.12 قیراط ہے جو اچھی قیمت میں فروخت ہوسکتا ہے۔

جان نے بتایا کہ یہ ہیرا اس نے پارک کے جنوب مغربی کنارے سے تلاش کیا ہے۔ یہ 15 فٹ گہری ایک کھائی کے کنارے موجود تھا۔ یہاں بارش کے بعد زمین کا نچلا حصہ نمودار ہوا تھا اور یوں ہیرا باہر نکل آیا تھا۔ پارک میں موجود ایک اہلکار نے کہا ہے کہ سال 2019ء میں ملنے والا یہ سب سے بڑا ہیرا ہے۔

jhon

پارک انتظامیہ کے ترجمان ویمون کوکس نے بتایا کہ یہ قدرتی طور پر ایک خوبصورت اور ہموار ہیرا ہے جس کی چمک انتہائی روشن ہے۔ واضح رہے کہ جسے یہاں سے ہیرا ملتا ہے وہ اسی کی ملکیت ہوجاتا ہے۔ پارک میں 16 جولائی کو 16 انچ بارش ہوئی تھی جس کے بعد کئی ہیرے دریافت ہوئے ہیں۔

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept