اردو کے منفرد شاعر قتیل شفائی کی آج اٹھارویں برسی

اردو زبان کے منفرد شاعر قتیل شفائی کی آج اٹھارویں برسی ہے۔ ان کا دلوں کو چھو لینے والا کلام اور فلمی گیت آج بھی روز اول کی طرح مداحوں کو مسحور کر دیتے ہیں۔نام اورنگزیب، تخلص قتیل شفائی، ایک معتبر نام کے لہجے کی سادگی و سچائی نے ہر خاص وعام کو متاثر کیا۔ احساسات و جذبات کو گیتوں کی ایسی مالا بنا دیا جو آسمان موسیقی پر آج بھی جگمگا رہے ہیں۔قتیل شفائی کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی اور کئی ایوارڈز سے نوازا گیا۔ لفظوں کی حرمت کو جلا بخشنے والے قتیل شفائی 11جولائی 2001 کو دارفانی سے کوچ کر گئے۔

قتیل شفائی کے درجنوں گیت فلموں کی کامیابی کا باعث بنے جن کی وجہ سے کئی گلوکاروں کو بھی شہرت حاصل کی۔ ان کے بے شمار شعر آج بھی زبان زد عام ہیں۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept