سونم کپورکا کشمیریوں کے حق میں بولنے سے انکار

اداکارہ کا کہنا تھا کہ موجودہ صورتحال افسوس ناک ہے اور انہیں بھی یہ سب دیکھ اور سن کر تکلیف ہو رہی ہے

سونم کپورکا کشمیریوں کے حق میں بولنے سے انکار سامنے آگیا، رپورٹ کے مطابق اداکارہ سونم کپور نے بھی آرٹیکل 370 ختم کیے جانے پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے وہاں کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ برطانوی نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے سونم کپور نے اعتراف کیا کہ وہ بہت ہی زیادہ محب وطن ہیں، اس لیے اس موقع پران کا خاموش رہنا ہی بہتر ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ موجودہ صورتحال افسوس ناک ہے اور انہیں بھی یہ سب دیکھ اور سن کر تکلیف ہو رہی ہے۔ سونم کپور کے مطابق انہیں ابھی کشمیر مسئلے پر مکمل درست معلومات نہیں، اس لیے بہتر یہی ہوگا کہ وہ درست معلومات موصول ہونے اور معاملے کو مکمل طور پرسمجھ لینے تک خاموش رہیں تو بہتر ہے۔ بولی وڈ اداکارہ نے بتایا کہ جیسے ہی انہیں کشمیر مسئلے پر درست معلومات موصول ہوگی اور وہ معاملے کو سمجھ جائیں گی تو اس پر ضرور اپنی رائے دیں گی۔

ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ کشمیرسے تشویش ناک خبریں سامنے آ رہی ہیں اورانہیں یہ سب سن کر دکھ ہو رہا ہے۔ اداکارہ کے مطابق ان کے والدین نے مقبوضہ کشمیر دیکھنے کے بعد ہی ان کا نام ’سونم‘ رکھا تھا۔ سونم کپور کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر بہت ہی اچھی جگہ ہے اور ایسی جگہ کو پر امن رکھا جا سکتا ہے۔ اداکارہ کا خیال تھا کہ کشمیر میں امن برقرار رکھا جا سکتا ہے، تاہم انہیں یہ علم نہیں کہ وہاں کیسے امن برقرار رکھا جا سکتا ہے، لیکن یہ سب ناممکن نہیں۔ انٹرویو میں انہوں نے انکشاف کیا کہ ان کے سب سے 2 بہترین دوست مسلمان ہیں اور ایک کا تعلق پاکستان سے ہے۔

سونم کپور کے مطابق چوں کہ ان کے خاندان کے شجر کا تعلق پاکستان کے صوبہ سندھ اور خیبرپختونخوا سے ہے تو انہیں ایک طرح سے یہ دیکھ کر تکلیف ہوتی ہے کہ 70 سال قبل ایک ہی رہنے والا ملک آج تقسیم ہو چکا ہے۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept