شوبز کےستارے ایف بی آر کے شکنجے میں

اداکاروں،گلوکاروں، ماڈلز،فیشن ڈیزانئر،اور پروڈکشن ہاوس کا دس سالہ ریکارڈ چیک کیا جائے گا

حکومت نے انٹرٹینمنٹ انڈسٹری سے وابستہ افراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئے بڑے اقدامات کا فیصلہ کیا ہے۔اس بارے میں ذرائع نے بتایا ہے کہ حکومت نے فنکار ،پروڈیوسرز،ڈائریکٹر، گلوکار،فیشن ڈیزانئر سمیت انٹرٹینمنٹ انڈسٹری کے دیگر شعبوں سے وابستہ افراد کے اثاثے چیک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تمام افراد کی دس سالہ آمدنی اور اخراجات کے علاوہ اثاثے بھی چیک کئے جائیں گے جبکہ بنکوں کے ساتھ گزشتہ دس سالوں میں ہونے والا لین دین بھی چیک کیا جائے گا۔اس بارے میں ایف بی آر سمیت دیگر اداروں کو احکامات جاری کردیئے گئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ اس سلسلے میں چند روز پہلے ایک اہم اجلاس بھی ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ تمام بڑے پروڈکشن ہاوس، پروڈیوسرز، ماڈلز،سینما مالکان،برانڈز، گلوکار،نامور فیشن ڈیزائنر،وغیرہ کی آمدنی اور خفیہ اثاثہ جات بارے معلومات جمع کرنے کے بعد کارروائی کا آغاز کیا جائے گا کیونکہ حکومت تمام شعبوں سے ٹیکس اکٹھا کرنے کی کوشش کررہی ہے لیکن شوبز سے وابستہ افراد کی اکثریت کم ٹیکس ادا کرتی ہے اور خاص طور پر وہ فنکار جن کی آمدنی کروڑوں میں ہے وہ انتہائی کم ٹیکس دیتے ہیں۔

دوسری طرف ایف بی آرحکام نے ایمنسٹی اسکیم کے بارے میں آگہی مہم تیزکرتے ہوئے کراچی میں ماڈلز اور شوبز شخصیات کے لیے آگہی سیشن کا اہتمام کیا۔ ریجنل ٹیکس آفس کراچی میں آگہی سیشن میں شوبز شخصیات کو ایمنسٹی اسکیم کی افادیت، طریقہ کار اور ٹیکس وجرمانے کی شرح سےآگاہ کیا گیا۔چیف کمشنران لینڈ ریونیو بدرالدین احمد قریشی نے اپنی ٹیم کے ساتھ شوبزسے تعلق رکھنے والی شخصیات کو ایمنسٹی اسکیم سے متعلق سوالات کے جواب دیتے ہوئے کہا اس آگاہی مہم سے ایمنسٹی سکیم کونتیجہ خیز بنانے میں مدد ملے گی۔ جب کہ جائیداد چھپانے والےفنکاروں کو بھی سخت کارروائی کا سامنا ہوگا۔ سیشن میں شریک شوبز شخصیات نے کہا کہ عوام کی طرح فنکار بھی اپنی آمدن اور اخراجات پرٹیکس ادا کررہے ہیں،اثاثے چھپانے والوں کو ایمنسٹی سے ضرور فائدہ اٹھانا چاہیے۔ ایف بی آر حکام نے یقین دلایا کہ ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کوہراساں نہیں  کیا جائے گا۔ فنکاروں نے  ایف بی آر پرعوام کا اعتماد بحال کرنے کی ضرورت پرزوردیا۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ حکومتی اداروں نے ایسے بے شمار فنکاروں کی فائلیں تیار کر لی ہیں جنہوں نے جائیداد اپنے رشتہ داروں کے نام کرائی ہوئی ہے جس کے ساتھ ساتھ یہ فنکار اپنی آمدنی بھی کم ظاہر کرتے ہیں۔کس فنکار کے پاس کتنی گاڑیاں اور گھر ہیں، ان کا بنک بیلنس کتنا ہے یا وہ کون سا کاروبار کرتے ہیں،اس کی تمام تفصیلات جمع کرلی گئی ہیں اور ایسے کئی فنکاروں سے رابطہ کرتے ہوئے انہیں مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنے اثاثے ظاہر کریں اور قانون کے مطابق ٹیکس بھی ادا کریں ۔ دوسری طرف  فنکاروں میں اس اطلاع کے بعد ہلچل مچ گئی ہےکیونکہ حکومت کے پاس اس بات کے بھی ٹھوس شواہش موجود ہیں کہ شوبز میں اکثر لوگ کالے دھن سے کاروبار کررہے ہیں جبکہ اداکارہ میرا نے بھی گزشتہ روز اپنے انٹرویو میں اس طرف نشاندہی کی تھی۔

You might also like