پاسداران انقلاب کی بس پر خودکش حملہ، 27 جاں بحق

ایران کے جنوب مشرقی علاقہ میں پاسداران انقلاب کی بس پر خودکش حملے کے نتیجہ میں 27 سے زائد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے ۔ 

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق صوبہ سستان میں بارود سے بھری کار میں سوار خود کش حملہ آور نے پاسداران انقلاب کی بس کو اس وقت نشانہ بنایا جب اہلکار ایک مقام سے دوسرے مقام پر منتقل ہورہے تھے۔ خودکش حملے کے نتیجے میں 27 اہلکار ہلاک جب کہ واقعے میں 10 زخمی بھی ہوئے جنہیں طبی امداد دی جارہی ہے۔ دوسری جانب ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیر نے واقعے پر اپنے ردعمل میں کہا کہ خودکش حملہ ایران کے شہریوں کے اسلامی انقلاب کے تصور کو نقصان نہیں پہنچا سکتا، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پہلے سے کہیں زیادہ اتحاد کی ضرورت بڑھ گئی ہے۔

پاسداران انقلاب نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے جاری ایک بیان میں بتایا کہ اہلکار سرحد پر ذمہ داریوں کی ادائیگی کے بعد واپس آرہے تھے کہ انہیں نشانہ بنایا گیا۔ ایرانی خبر رساں ادارے کے مطابق مسلح گروپ جیش العاد نے پاسداران انقلاب پر حملے کی ذمہ داری قبول کرلی۔

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept