شادی کی تقریب میں حملہ، 6 افراد ہلاک

صوبہ ننگرہار کا علاقہ داعش سمیت مختلف جنگجو تنظیموں کا مرکز ہے جنہوں نے ماضی میں صوبے میں مختلف حملے کیے ہیں

افغانستان کے شمالی علاقے میں شادی کی تقریب میں خودکش حملے کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک اور 14 زخمی ہوگئے۔ طالبان جنہوں نے شہریوں کی ہلاکتوں کی تعداد میں کمی کی کوشش پر اتفاق کیا ہے ان کی ویب سائٹ پر جاری بیان میں صوبے ننگرہار میں ہونے والے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی۔

صوبہ ننگرہار کا علاقہ داعش سمیت مختلف جنگجو تنظیموں کا مرکز ہے جنہوں نے ماضی میں صوبے میں مختلف حملے کیے ہیں۔صوبے کے ترجمان نے اے ایف پی کو بتایا کہ ضلع پچیراگام میں شادی کے تقریب میں صبح 8 بجے ایک خودکش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑایا۔

دھماکے کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک اور 14 زخمی ہوئے۔ننگر ہار کے مقامی ہسپتال کے ترجمان ظاہر عادل نے کہا کہ 2 لاشوں اور 11 زخمیوں کو ننگر ہار شہر کے ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔ پولیس عہدیدار فیض محمد بابر خیل نے کہا کہ ہلاک ہونے والوں میں حکومتی حمایت یافتہ ملیشیا کا کمانڈر ملک طور بھی شامل تھا جس نے شادی کی تقریب کا اہتمام کیا تھا۔

 

You might also like