ٹرمپ، عمران ملاقات میں سعودی ولی عہد کا کردار منظر عام پر

سعودی ولی عہد نے چین، پاکستان، ترکی اور روس کے اتحاد بننے پر تشویش میں مبتلا ہو کر ملاقات کروانے میں رول کردار ادا کیا

سعودی ولی عہدہ شہزاد محمد بن سلیمان کی طرف سے ٹرمپ، عمران ملاقات کا مقصد منظر عام پر آگیا۔ کھوج نیوز ذرائع کے مطابق سعودی ولی عہد نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظم پاکستان عمران خان کے درمیان ملاقات کروانے میں اہم کردار ادا کیا ہے جس کی وجوہات بھی سامنے آگئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق سعودی ولی عہد نے جنوبی ایشیاء میں چین، پاکستان، ترکی اور روس کے اتحاد بننے پر تشویش میں مبتلا ہو کر امریکی صدر اور وزیراعظم عمران خان کی ملاقات کروانے میں رول کردار ادا کیا ہے۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ چین، روس، ترکی اور پاکستان بننے والے اس نئے اتحاد میں آنے والے چند دنوں میں ایران بھی شامل ہونے والا ہے اور دنیا اس بات سے بخوبی آگاہ ہے کہ سعودی عرب اور امریکہ، ایران کی مخالفت میں سخت مؤقف اختیار کیے ہوئے ہے۔

ماہرین کاکہنا ہے کہ اس نئے اتحاد میں روس، چین، ترکی، پاکستان اور ایران کی شمولیت سے ناصرف امریکہ کو خدشات لاحق ہیں بلکہ سعودی عرب بھی ایران پر مختلف نوعیت کے الزامات عائد کرتا رہتا ہے اور اسے عرب ممالک میں دہشت گرد واقعات کا ذمہ دار قرار دیتا ہے۔

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept