امریکا ،پاکستان کو پھرلولی پاپ دینے میں کامیاب

امریکا ہمیں لولی پاپ دے کر روس‘ چین اور طاقتور اندرونی گروپوں کی نظر میں گندہ کر دے گا

JAVAID CH

معروف صحافی اور کالم نویس جاوید چوہدری اپنے کالم "کوکین کی لائن” میں لکھتے ہیں کہ  میں ملیشیا فورسز کے خلاف ہوں لیکن میں اس کے ساتھ ساتھ کسی کے حکم پر ان کی پیدائش اور پھر کسی اور کے حکم پر ان کے خاتمے کا بھی انتہائی مخالف ہوں‘ آزاد قومیں اس قسم کی خدمات سرانجام نہیں دیتیں‘ ہمیں تیسری قیمت ایران کے سلسلے میں دینی پڑے گی‘ ہمیں ایران کے دشمنوں کو ’’گراؤنڈ سروسز‘‘ فراہم کرنا ہوں گی اور یہ سیدھی سادی خودکشی ہو گی اور ہمیں ’’سی پیک‘‘ کو بھی سرد خانے میں ڈالنا ہوگا اوریہ ہمارے جیسے ملک کے لیے چھوٹی قیمت نہیں ہو گی‘ یہ درست ہے ہم اس وقت آئی ایم ایف اور ایف اے ٹی ایف جیسے ہاتھیوں کی ٹانگوں کے درمیان کھڑے ہیں لیکن کہیں ایسا نہ ہو جائے ہم ان سے بچتے بچتے روس اور چین کا اعتماد بھی کھو بیٹھیں اور ہم ان لوگوں کو بھی ناراض کر بیٹھیں جو 35 سال سے کشمیر کے نام پر جانیں دے رہے ہیں۔

حافظ سعید اور مولانا مسعود اظہر کے سیکڑوں مجاہدین شہید ہو چکے ہیں چناں چہ ہم ان لوگوں کو ناراض کر کے بھی زیادتی کریں گے‘ یہ سچ ہے ہم امریکا کے منہ سے گنا چھیننے کی کوشش میں زخمی ہو سکتے ہیں لیکن یہ بھی درست ہے ہم چین‘ روس اور اپنے نان اسٹیٹ ایکٹرز کو ناراض کر کے بھی بری طرح کچلے جائیں گے‘ امریکا ہمیں لولی پاپ دے کر روس‘ چین اور طاقتور اندرونی گروپوں کی نظر میں گندہ کر دے گا‘ یہ ہمیں سب کی نظروں میں بے اعتبار بنا دے گا لہٰذا احتیاط لازم ہے‘ امریکا کی دوستی کوکین کی لائن ہوتی ہے‘ یہ شروع میں انسان کو مریخ تک پہنچا دیتی ہے لیکن انسان نشہ اترنے کے بعد زمین کے قابل بھی نہیں رہتا‘ ہم ماضی میں یہ غلطی کرتے رہے ہیں‘ ہمیں یہ اب دہرانی نہیں چاہیے‘ ہمیںایک ہاتھی کے چکر میں تین ہاتھی ناراض نہیں کرنے چاہئیں۔

(بشکریہ روزنامہ ایکسپریس )

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept