برہان وانی کی شہادت میں کون ملوث، دل ہلا دینے والا انکشاف

7 جولائی کو برہان وانی کو بھی معلوم نہ تھا کہ اسے بمدورا کے اس گاؤں تک اس کی شہادت کھینچ لائی ہے

برہان وانی کی شہادت میں کون ملوث، دل ہلا دینے والا انکشاف‘7جولائی، دو ہزار سولہ کی رات تھی، مقبوضہ کشمیر کے ضلع اننت ناگ (اسلام آباد) کے علاقے کوکرناگ کے گاؤں بمدورا رات کی تاریکی میں پوری طرح ڈوبا ہوا تھا۔ کسی کو خبر نہ تھی کہ اس گاؤں میں کچھ دیر بعد مقبوضہ کشمیر کی جدوجہدِ آزادی میں مصروف 21 سالہ نوجوان ہیرو برہان وانی یہاں پہنچنے والا ہے۔

برہان وانی کو بھی معلوم نہ تھا کہ اسے بمدورا کے اس گاؤں تک اس کی شہادت کھینچ لائی ہے، بمدورا نامی اس گاؤں میں برہان وانی کے قریبی ساتھی سرتاج احمد شیخ کے ماموں کی رہائش گاہ تھی اور برہان وانی کو اپنے ساتھی سرتاج احمد شیخ پر مکمل بھروسہ تھا اور سرتاج احمد شیخ کو اپنے ماموں اور ان کے اہل خانہ پر مکمل بھروسہ تھا لیکن اس رات نہ صرف سرتاج احمد شیخ کے ساتھ دھوکا ہونے والا تھا بلکہ برہان وانی بھی اس دھوکے کی زد میں آنے والا تھا۔

برہان وانی پر بھارتی فوج نے دس لاکھ روپے کا انعام رکھا تھا اور یہ دس لاکھ روپے سرتاج احمد شیخ کے ماموں اور ان کے اہل خانہ کے لیے بہت بڑی رقم تھی اور اسی رقم کے لیے کشمیر کی آزادی کی جدو جہد کے عظیم سپوتوں کو بھارتی فوج کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept