ریلوے لائیو ٹریکنگ سسٹم اور تھل ایکسپریس کا افتتاح

وزیراعظم عمران خان پاکستان ریلوے لائیو ٹریکنگ سسٹم اور تھل ایکسپریس کا افتتاح کردیا‘ افتتاحی تقریب وزیراعظم ہاؤس اسلام آباد میں ہوئی ۔ 

افتتاحی تقریب سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ٹرین کے ذریعے عام آدمی سفر کرتا ہے اور ٹریکنگ سسٹم سے ریلوے مسافروں کیلئے آسانی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت میں 6 ماہ ہونے والے ہیں اور نئے پاکستان میں لوگوں کو غربت سے نکالنا چاہتے ہیں، پہلے سی پیک ایک سڑک اور چار پاور اسٹیشنوں کا نام تھا لیکن اب چین کے ساتھ متعدد شعبوں میں کام کریں گے۔

وزیراعظم کا وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کو مخاطب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ریلوے میں جوکرپشن اور چوری ہوئی اس کے کیسز نیب کو بھجوائیں۔ انہوں نے کہا کہ این آر او ون اور این آر او ٹو کے بعد کرپٹ لوگوں کا خوف ختم ہوگیا۔ ان کا کہنا ہے کہ ماضی کی حکومت کے لئے گئے قرضوں کے باعث ہماری حکومت ایک دن کا سود 6 ارب روپے ادا کررہی ہے اور قرضوں کی قسط الگ دے رہیں ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے شیخ رشید کو ہدایت دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ریلوے میں مزید خرچے کم کریں اور تمام وزارتوں کو کہا ہے کہ اپنے اخراجات کم کریں۔ انہوں نے کہا کہ گیس سیکٹر پر157 ارب روپے کے قرضے ہیں اور 50 ارب روپے کی سالانہ گیس کی چوری ہے لہٰذا گیس کی قیمتیں نہ بڑھاتے توگیس کمپنیاں بند ہوجاتیں۔

دوسری جانب انچارچ ٹرین ٹریکنگ سسٹم مدثر زیدی کے مطابق مسافر ٹرینوں میں ٹریکنگ سسٹم نے کام شروع کردیا ہے جس سے معلوم کیا جاسکے گا ٹرین کس مقام پر موجود ہے اور منزل پر کب تک پہنچے گی۔ انچارچ ٹرین ٹریکنگ سسٹم کا مزید کہنا ہے کہ عوام چاہیں تو اپنے موبائل فون پر ٹرین کی آمد سے قبل کا الارم بھی لگا سکتے ہیں۔ تھل ایکسپریس راولپنڈی سے ملتان کیلئے چلائی گئی ہے جو مظفر گڑھ، بھکر، دریا خان اور میانوالی سے گزرے گی۔ تھل ایکسپریس ملتان اسٹیشن سے راولپنڈی کیلئے صبح 7 بجے روانہ ہوگی جب کہ راولپنڈی سے ملتان کیلئے بھی صبح 7 بجے چلائی جائے گی۔

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept