نیب کو ریفرنس دائر کرنے کا حکم

سندھ ہائیکورٹ نے سابق صوبائی وزیر قانون ضیاء الحسن لنجار کے خلاف کرپشن الزامات اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے معاملے پر نیب کو ریفرنس دائر کر کے 20 مارچ تک رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

چیف جسٹس احمد علی شیخ نے ضیاء لنجار کے خلاف کیس کی سماعت کی تو اس موقع پر پراسیکیوٹر نیب نے عدالت کو بتایا کہ ضیاء لنجار تفتیش میں تعاون نہیں کررہے۔
عدالت نے سابق صوبائی وزیر ضیاء لنجار کو نیب سے تعاون کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ نیب جو بھی سوالنامہ دے اس کا جواب دیں۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ضیاء لنجار کے خلاف انکوائری جاری ہے جس میں مزید دستاویزات اکٹھی کی جارہی ہیں۔

پراسیکیوٹر نیب نے عدالت کو بتایا ‘ضیاء لنجار کے ڈیفنس کراچی میں بنگلہ خریدنے کا بھی سراغ لگالیا، انکوائری میں انکشاف ہوا کہ بنگلےکا سیل ایگریمنٹ ان کے نام ہے اور انہوں نے پراپرٹی سسر کے نام کرا رکھی ہے، بنگلے کی مالیت 9 کروڑ ہے جسے اثاثے میں شمار نہیں کیا گیا’۔

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept