لیگی رہنما نے سانحہ ساہیوال کے حوالے سے المناک حقیقت بے نقاب کردی

مسلم لیگ ن کے رہنما محمد زبیر نے کہاہے کہ ساہیوال سانحہ میں تفتیش وغیر ہ سب کچھ ختم ہوگئی ،وزیر اعظم متاثرہ خاندان سے ملے اور وہ بھی جاکر نہیں ملے بلکہ ان کو بلا کر ملاقات کی گئی۔

 محمد زبیر نے کہا کہ نو مہینے میں حکومت گرانے کی کوشش نہیں کرنی چاہئے ،ساہیوال سانحہ میں تفتیش وغیر ہ سب کچھ ختم ہوگئی اور 80 دن بعد وزیر اعظم متاثرہ خاندان سے ملے اور وہ بھی جاکر نہیں ملے بلکہ ان کو بلا کر ملاقات کی گئی ، ہماری اپنا ایک کلچر ہے کہ ہم تعزیت کیلئے کسی کے پاس جاتے ہیں ، وزیر اعظم کو کوئٹہ کا دورہ کرنا چاہئے تھا ۔

انہوں نے کہا کہ کے پی میں کرپشن کے کئی کیسز سامنے آئے ہیں ، جہانگیرترین نے گھر کے ملازمین کے نام پر اکاﺅنٹس کھلوائے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی ایک بات سے ہم سب اتفاق کرتے ہیں کہ مسائل کی شناخت میں ان کا کوئی ثانی نہیں ہے لیکن اب لوگ یہ توقع کرتے ہیں کہ اب یہ ان مسائل کاحق بھی نکالیں ، وزیر اعظم کے”احساس پروگرام“ کا بجٹ میں کہیں ذکرنہیں ہے ، یہ صرف ایک اعلان ہی ہے ۔