اسمبلی میں حکومت اور اپوزیشن ارکان میں تلخ کلامی

سندھ اسمبلی میں حکومتی اور اپوزیشن اراکین میں تلخ کلامی ہوئی، دونوں نے ایک دوسرے کی قیادت کو برا بھلا کہاجبکہ حلیم عادل شیخ اور اسپیکر کے درمیان تلخ جملوں کاتبادلہ بھی ہوا۔ اسپیکر کو کارروائی کچھ دیر کے لئے روکنا پڑی۔ اسمبلی کی کارروائی شروع ہوئی تو پی پی کےشرجیل میمن اورفیاض بٹ جبکہ پی ٹی آئی کےراجا اظہراورارسلان گھمن آمنے سامنے آگئے، وزیربلدیات سعید غنی نے بیچ بچاؤ کرایا۔

اسپیکر آغا سراج درانی نے کہا کہ ایک بارمیری ضمانت ہو جائے تو اسمبلی گیٹ سے باہر نکل کرمجھ سے بات کریں، اپوزیشن سمجھتی ہے میں بہت کرپٹ آدمی ہوں، اپوزیشن والےیہ بتاناچارہے ہیں کہ میں ہندوستان سے آیاہوں، میں کافی عرصے سےاسمبلی آرہاہوں۔پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی حلیم عاد شیخ نے کہا کہ اپوزیشن رہنماؤں کو ایوان میں بولنے کی اجازت نہیں دی جاتی، پرائیویٹ ممبرڈے پربھی اپوزیشن اراکین کوخاموش رہنے کی تلقین کرتے ہیں۔ اسپیکر سندھ اسمبلی نے مزید کہا کہ میں کتناہی براہو ں لیکن اس وقت اسمبلی کااسپیکر ہوں، فردوس شمیم نقوی نے میرے لیے غلط  الفاظ استعمال کیے ہیں۔

You might also like