نواز شریف نے جیل سے پارٹی کمان سنبھال لی

نواز شریف نے جیل میں پارٹی کمان سنبھالتے ہوئے پارٹی کو عید کے بعد حکومت مخالف احتجاج کی اجازت دیدی۔ انہوں نے کہا ایمنسٹی سکیم کو برا کہنے والے اب کس منہ سے سکیم لائے۔

کھوج نیوز ذرائع کے مطابق نواز شریف نے موجودہ حالات میں حکومتی پالیسیوں اور ملکی بگڑتی معاشی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا آئی ایم ایف کے پیکچ کے بعد ڈالر کی قیمت میں اضافہ نہیں ہونا چاہیے تھا، مہنگائی کے طوفان میں عام آدمی مرنے پر آچکا ہے، پیٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے اور روپے کی قدر میں کمی سے نقصان صرف پاکستان کا ہوا ہے۔

نواز شریف سے ملاقات میں پارٹی کے کارکنان نے ملکی پالیسیوں پر احتجاجی مظاہروں کا اظہار کیا۔ نواز شریف نے حکومت کے خلاف احتجاجی پالیسی بنانے کیلئے پارٹی کی سنئیر لیڈرشپ کو زمہ داری سونپ دی اور کہا کہ فوری طور پر مرکزی و صوبائی قیادت احتجاجی لائحہ عمل مرتب کرے، مسلم لیگ ن اب مہنگائی پر مزید خاموش نہیں رہے گی، حکومت نے عوام کے ساتھ جو رویہ اپنایا ہے وہ کسی صورت قبول نہیں، اخبارات میں مہنگائی اور ڈالر کی اڑان کا پڑھ کر بہت پریشان ہوتا ہوں، آج اوپن مارکیٹ میں فارن کرنسی نہیں مل رہی، ہماری بدقسمتی ہے ہم نے ڈالر کی قیمت کو مستحکم رکھا اور ملک میں ترقی کا پہیہ چلایا۔

You might also like