آئی ایم ایف معائدہ قومی اسمبلی میں پیش کرنے کا مطالبہ

پیپلز پارٹی کے سیئنر رہنما اور سینیٹر رضا ربانی نے آئی ایم ایف سے معاہدےکو سینیٹ اور قومی اسمبلی میں پیش کرنے کا مطالبہ کردیا۔ سینیٹر رضاربانی نے آئی ایم ایف معاہدے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہاکہ معاہدے کی شفافیت پر سوالیہ نشان اُٹھ رہے ہیں، اب بجٹ سے لے کر صوبوں کو ملنے والے این ایف سی ایوارڈ تک ہر بات میں آئی ایم ایف کی مرضی چلے گی حکومت نے ملک کی مالی سلامتی کو گروی رکھ رکھ دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اب بجٹ بھی آئی ایم ایف بنائےگااور ممکن ہے، حفیظ شیخ کو پارلیمنٹ میں بجٹ تقریر کرنے کی ضرورت ہی نہ پڑے۔رضاربانی نےکہاکہ حکومت آئی ایم ایف کے کہنے پر آئینی ترمیم بھی کر سکتی ہے، سیاسی اور معاشی طور پر مصری نظام لانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ سینیٹر رضا ربانی نے کہا کہ معاہدے کے وقت حکومت کا کوئی منتخب آدمی موجود نہیں تھا جو جمہوریت اور پارلیمنٹ کے منہ پر تمانچہ ہے۔

You might also like