اپوزیشن کا حکومت مخالف اے پی سی بلانے پر اتفاق

مولانا فضل الرحمان نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری سے ملاقاتیں کیں

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری سے ملاقاتیں کیں جس میں جون کے آخر میں اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) بلانے پر اتفاق کیا گیا۔ مولانا فضل الرحمان اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کے درمیان ہونے والی ملاقات میں ملکی سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ بہت جلد آل پارٹیز کانفرنس بلائی جائے گی، تاریخ کا اعلان مشاورت کے بعد کیا جائے گا۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ملاقات میں اتفاق ہوا ہے کہ تمام مسائل کے حل کے لیے اے پی سی بلائی جائے۔

انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کنٹینر کے اوپر کھڑے ہو کر عوام کو سبز باغ دکھاتے رہے، 10 مہینوں میں ظالمانہ اقدامات سے عام آدمی کی زندگی جہنم بنا دی گئی ہے۔ وفاقی بجٹ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ کا بدترین بجٹ پیش کیا گیا، حکومت کو مجبور کریں گے کہ یہ بجٹ واپس لے۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ممکن ہے مزید اراکین پارلیمنٹ کی گرفتاریاں ہو جائیں لیکن اس بات پر اتفاق رائے ہے جو  اے پی سی کا فیصلہ ہو گا وہ سب کو قبول ہو گا۔

 

You might also like

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept