جسٹس فائزریفرنس :حکومت امید سے

جسٹس فائز عیسیٰ قاضی ریفرنس پر حکومت پوری طرح امید سے ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل ریفرنس سننے کے بعد فیصلہ جسٹس

جسٹس فائز عیسیٰ قاضی ریفرنس پر حکومت پوری طرح امید سے ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل ریفرنس سننے کے بعد فیصلہ جسٹس فائز عیسیٰ قاضی کے خلاف ہی دے گی، ذرائع کے مطابق

وزیراعظم عمران خان کو بتایا گیا ہے کہ حکومت کی جانب سے سپریم جوڈیشل کونسل میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیخلاف دائر کیے گئے ریفرنس کے ساتھ کچھ برا نہیں ہوا۔ وزیراعظم کو بتایا گیا ہے کہ میڈیا کی قیاس آرائی کہ ریفرنس کو خارج کیا جا رہا ہے درست نہیں بلکہ حقیقت یہ ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل نے پہلے ہی اس کیس پر کونسل کے ضابطہ انکوائری 2005ء کی شق (3)8؍ کے تحت کارروائی شروع کر دی ہے۔

اس رول کے تحت، اگر کونسل کی رائے ہے کہ کسی بھی رائے تک پہنچنے سے قبل اسے جوابدہ جج کا موقف بھی سن لینا چاہئے تو کونسل اُس جج کو کونسل کے روبرو پیش ہونے کیلئے کہہ سکتی ہے۔ کونسل انہیں وہ معلومات اور ان کیخلاف پیش کیا جانے والا مواد فراہم کر سکتی ہے۔

اگرچہ میڈیا رپورٹس دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ اٹارنی جنرل انور منصور سے سپریم جوڈیشل کونسل نے سخت سوالات کیے تھے اور جب وہ کونسل کے اجلاس سے باہر نکلے تو وہ پریشان اور فکرمند نظر آئے۔ سرکاری ذرائع اس بات کی تردید کرتے ہیں اور پراعتماد نظر آتے ہیں

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept