منی لانڈرنگ، قانونی ماہرین نے نیب کے دعوؤں کو مسترد کردیا

بیرون ممالک سے رقوم منگوانے والے کوگرفتار کرناسنگین اور قانونی غلطی‘منی لانڈرنگ کا یہ دعویٰ بھی نیب کر رہا ہے

سابق وزیراعظم میاں نوازشریف اور مریم نواز پر نیب کے منی لانڈرنگ سے متعلق الزامات کو قانونی ماہرین نے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیرون ممالک سے آنے والی رقوم کو منی لانڈرنگ قرار دینا غلط ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ حقیقت یہ ہے کہ بیرون ممالک سے رقوم منگوانے والے کوگرفتار کرناسنگین اور قانونی غلطی ہے اورمنی لانڈرنگ کا یہ دعویٰ بھی وہ ادارہ نیب کر رہا ہے جو ایک کے بعد ایک کیس میں اپوزیشن جماعتوں سے تعلق رکھنے والے سیاسی قائدین اور رہنماؤں کو گرفتار کر کے ان سے تحقیقات کر رہاہے۔

واضح ہو کہ چوہدری شوگر ملز کیس کے الزام میں شریف خاندان پہلے ہی پھنسا ہوا ہے اور اب نیب کی بڑھتی تحقیقات شریف خاندان کے لیے نئی مشکلات کا سبب بن رہا ہے۔ نیب کی چوہدری شوگر ملز کیس میں بڑھتی تحقیقات سے ایسا لگ رہا ہے کہ شریف خاندان کے مزید افراد اس کی زد میں آئیں گے جب کہ امکان ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف پر جلد یہ کیس بھی دائر ہوجائے۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept