فضل الرحمن نے فیصلہ کن جنگ لڑنے کی تیاری مکمل کر لی

اسلام آباد دھرنے کے دوران حکومت کے خاتمے، وزیراعظم کے استعفیٰ اور90 دنوں میں نئے انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ کیا جائیگا

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے قائد مولانا فضل الرحمان نے حکومت کے خلاف لانگ مارچ کے حوالہ سے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے جنگ لڑنے کی تیاری مکمل کر لی ہے۔

مولانا فضل الرحمان نے شیرپاؤ سے ملاقات،اسفندیار سے رابطہ کیا، محرم الحرام کے بعد بلاول بھٹو، محمود اچکزئی، سراج الحق اور حاصل بزنجو کے ساتھ رابطے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ نواز شریف نے کیپٹن صفدر کے ذریعے مولانا کو دھرنے کی حمایت کا پیغام دیا ہے۔ دھرنے کی تاریخ کا اعلان کر نے کے لئے 18 اکتوبر کو مجلس عاملہ کا اجلاس طلب کرلیا ہے، 19 اکتوبر کو مظفرآباد میں جلسہ عام ہوگا۔

اسلام آباد دھرنے کے دوران حکومت کے خاتمے، وزیراعظم کے استعفے اور90 دنوں میں نئے انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ کیا جائیگا جبکہ حکومت کے خاتمے تک دھرنا جاری رہے گا۔ جمعیت علماء اسلام نے حکومت کے خلاف فیصلہ کن راؤنڈ کا آغاز کرتے ہوئے حکومت کے خاتمے تک اسلام آباد میں دھرنا دینے کا اعلان کیاہے جس کے لئے ملک گیر تیاریوں کا سلسلہ جاری ہے، جمعیت کی مجلسِ عاملہ کی جانب سے صوبہ بھر میں کارکنوں اور عوام کو منظم و متحرک کرنے کے لیے دوروں کا سلسلہ مکمل کرلیاگیا ہے،دھرنے کے انتظامات کے لیے مختلف کمیٹیاں بھی قائم کی گئی ہیں۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept