سابق سربراہ سندھ بنک وعدہ معاف گواہ بن گئے

کمپنیوں کو قرض دینے کی انکوائری میں اہم پیشرفت، گرفتار سندھ بنک کے سابق سربراہ ندیم الطاف وعدہ معاف گواہ بن گئے

جعلی اکاؤنٹس کیس میں بوگس کمپنیوں کو قرض دینے کی انکوائری میں اہم پیشرفت، گرفتار سندھ بنک کے سابق سربراہ ندیم الطاف وعدہ معاف گواہ بن گئے۔ ملزم ندیم الطاف نے اومنی گروپ کی جعلی کمپنیوں کو 1 ارب روپے قرض دیکر خورد برد کرنے کا اعتراف کرلیا۔ مجسٹریٹ نے گرفتار ملزم ندیم الطاف کا اقبالی بیان ریکارڈ کرلیا۔ چیئرمین نیب نے ملزم کو وعدہ معاف گواہ بنانے کی درخواست منظورکرلی۔ ملزم ندیم الطاف نے کہا کہ نیب کا ساتھ مکمل تعاون اور حقائق بتانے کو تیار ہوں۔

ملزم ندیم الطاف کو جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر آج عدالت پیش کر دیا گیا، نیب نے گرفتار ملزم ندیم الطاف کی رہائی کی استدعا کر دی، احتساب عدالت نے ندیم الطاف کو رہا کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہا ملزم کی وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست پر تمام قانونی نقاط پرعمل کر لیا گیا ہے، ندیم الطاف کا 164 کا بیان بھی ریکارڈ کر لیا ہے، ملزم کو چیئرمین کے سامنے بھی پیش کر چکے ہیں، ندیم الطاف اب ہمارہ گواہ بن گیا ہے، ملزم ندیم الطاف کے رہائی کی احکامات جاری کیے جائیں، ملزمان پر اومنی گروپ کی فرنٹ کمپنیوں کو غیر قانونی قرض دینے کا الزام ہے۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept