وفاقی وزراء عمران خان کی پالیسیوں پر مایوس‘ حامد میر کا انکشاف

عمران خان کے وزیراعظم بننے کا پاکستان کو بہت فائدہ ہوا ہے‘ دوسرے وزیر نے تڑپ کر پوچھا کہ کیا فائدہ ہوا؟

سینئر صحافی و اینکر پرسن حامد میر نے انکشاف کیا ہے کہ عمران حکومت کی کابینہ کے وفاقی وزراء وزیراعظم کی ناقص پالیسیوں پر ان سے سخت مایوس ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کے وزیراعظم بننے کا پاکستان کو بہت فائدہ ہوا ہے۔ دوسرے وزیر نے تڑپ کر پوچھا کہ کیا فائدہ ہوا؟ ہم نے کراچی میں کچرا ختم کرنے کی مہم شروع کی اور ہماری سیاست کا کچرا بن گیا۔ پہلے وزیر نے بڑے اطمینان سے کہا کہ عمران خان کے وزیراعظم بننے کا سب سے بڑا فائدہ یہی ہوا ہے کہ صرف ہماری ”یوتھ“ نہیں بلکہ ہماری اپنی بھی کئی غلط فہمیاں دور ہو گئیں۔ یاد کرو ہمارے خان صاحب مکے لہرا کر کہا کرتے تھے کہ اگر میں وزیراعظم بن گیا تو صرف نوے دن میں کرپشن ختم کر دونگا لیکن حکومت میں آنے کے ایک سال کے بعد پشاور میں بی ا?ر ٹی کا منصوبہ ہم سب کے لئے ایک گالی بن گیا ہے۔

ہمارا خیال تھا کہ ہم آئی ایم ایف کے بغیر حکومت چلا لیں گے اور اگر آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا تو خودکشی کر لیں گے لیکن ہمیں آئی ایم ایف کے پاؤں پڑنا پڑا اور آئی ایم ایف نے ہمارے غرور کو خاک میں ملا دیا۔ عمران خان وزیراعظم نہ بنتا تو ہم یہی سمجھتے کہ وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانا اور گورنر ہاؤس کی دیواریں گرانا بہت آسان ہے، ہم یہی سمجھتے کہ لوٹی ہوئی دولت واپس لانا اور قرضوں کا بوجھ اتارنا بہت آسان ہے، حکومت میں آ کر ہم نے قرضوں کے پچھلے تمام ریکارڈ توڑ دیئے ہیں۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept