شہباز شریف عثمان بزدار کے شکر گزار

13 ماہ گزرنے کے بعد بھی دونوں حکومت کے کندھوں پر سوار ہیں‘ یہ انھیں نیچے نہیں اترنے دے رہے

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے شکر گزار ہیں کیونکہ عثمان بزدار کی بدولت آج بھی پنجاب میں وزیراعلیٰ پنجاب کی یاد تازہ ہے۔

پنجاب میاں شہباز شریف اورپاکستان میاں نواز شریف کو بھول جانا چاہتا ہے‘ لوگ انھیں بھول بھی جاتے ہیں لیکن عمران خان نواز شریف اور عثمان بزدار عوام کو میاں شہباز شریف کو بھلانے نہیں دے رہے‘ یہ 13 ماہ گزرنے کے بعد بھی حکومت اور پاکستان تحریک انصاف دونوں کے کندھوں پر سوار ہیں‘ یہ انھیں نیچے نہیں اترنے دے رہے‘عوام روزانہ مان لیتے ہیں 2018 کے انتخابات میں عمران خان ہی کو ووٹ ملے تھے۔

قوم انھیں مکمل طور پر فراموش بھی کرنا چاہتی ہے لیکن پنجاب میں جب بھی بارش آ جائے‘ اسٹریٹ کرائمز بڑھ جائیں‘ پی کے ایل آئی نامکمل رہ جائے‘ اورنج لائن ٹرین نہ چل پائے‘ میٹرو کے کرایوں میں اضافہ ہو جائے‘ سرکاری پھول‘ پودے اور گملے چوری ہو جائیں‘ گلی محلوں میں گندگی کے انبار لگ جائیں‘ پولیس بندے مار دے یا پھر ڈنگی پھوٹ پڑے عثمان بزدار فوراً لوگوں کو یاد کرا دیتے ہیں لاہور میں ایک میاں شہباز شریف بھی ہوتا تھا اور وہ لانگ بوٹ پہن کر پانی اور کیچڑ میں اتر جاتا تھا‘ وہ زینب جیسے واقعات کے بعد آئی جی کو قصور بھجوا دیتا تھا اور وہ راتوں کو اٹھ اٹھ کر سڑکوں‘ پلوں‘ ریلوے ٹریکس اور انڈرپاسز کا جائزہ لیتا تھا۔

میں سمجھتا ہوں پنجاب میں جب تک عثمان بزدار پلس موجود ہے‘ لوگ اس وقت تک میاں شہباز شریف کو نہیں بھول سکیں گے‘ یہ اس وقت تک پچھلے دس سالوں کو یاد کرتے رہیں گے‘ صوبے میں جب بھی کوئی حادثہ ہو گا‘ جب بھی کوئی بحران پیدا ہو گا‘ جب بھی سفارش پر کسی کا تقرر یا تبادلہ ہو گا‘ حکومت کو جب بھی کسی محکمے کے لیے کوئی سربراہ نہیں ملے گا اور لوگ جب بھی کسی کو سی ایم یا وزیراعلیٰ کہیں گے تو انھیں بے اختیار میاں شہباز شریف یاد آ جائے گا۔

شاید آپ یہ خبریں بھی پسند کریں

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept