ڈی جی نیب لاہور کے انٹرویو پرہنگامہ

shahid khaqan abasi
WebDesk 2 WebDesk 2 , نومبر 09, 2018

قومی اسمبلی میں ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کے انٹرویو پر اپوزیشن اور حکومتی ارکان آمنے سامنے آگئے۔ ایوان میں اپوزیشن نے شدید احتجاج کیا، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ چیئرمین نیب کی ہدایت پر ڈی جی نیب لاہور نے اپوزیشن ارکان کا میڈیا ٹرائل کیا،نیب افسر زیر سماعت کیسز کی تفصیلات بتا کر ایوان کے رکن کو بدنام کر رہا ہے۔ جواب میں فواد چوہدری نے کہا شروعات اپوزیشن لیڈر نے کی نیب کیخلاف 3گھنٹے کی تقریر سے ہوئی، آئین کا آرٹیکل 4 کہتا ہے کہ قانون سب کیلئے برابر ہوگا، چاہے وہ ایوان کے اندر سے ہو یا باہر سے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نیب چیئرمین کی ہدایت پر ادارے کا ایک افسر ارکان کا میڈیا ٹرائل کررہا ہے،اس کے خلاف تحریک استحقاق پیش کرنے دی جائے۔ پیپلز پارٹی کے نوید قمر نے کہا اگر ممبران کے اس طرح کے ٹرائل کی اجازت دی گئی تو سب کے ساتھ ایسا ہوگا۔ وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے اپوزیشن کی تحریک استحقاق کو غیر آئینی قرار دے دیا جس کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے اپوزیشن کو تحریک استحقاق پیش کرنے کی اجازت نہیں دی اور کہا وہ اس پر پہلے قانونی رائے لیں گے۔

khouj

Established in 2017, Khouj is a news website, which aims at providing news from all the spheres of life. In the contemporary world, Khouj News aims at providing authentic news unlike other major news sources on social media.