سپریم کورٹ کی ایک بار پھر نجی سکولوں کو وارننگ

سپریم کورٹ کی ایک بار پھر نجی سکولوں کو وارننگ، 5 ہزار روپے سے زائد ماہانہ فیس وصول کرنے والے نجی سکولوں کو 20 فیصد کمی کرنے کا حکم دیدیا۔ 

ذرائع نے بتایا ہے کہ سپریم کورٹ میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے نجی سکولوں کی فیسوں کے اضافے سے متعلق کیس کی سماعت کی، جس میں سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر، پرائیوٹ سکولز ایسوسی ایشن کے صدر، سمیت سیکرٹری لاء اینڈ جسٹس کمیشن عدالت میں پیش ہوئے۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ فیس میں کمی کا فیصلہ تمام نجی سکولز کے لئے ہے، جو سکول اس فیصلے پر عمل نہیں کر رہے وہ توہین عدالت کے مرتکب ہو رہے ہیں۔ ایک نجی سکول کی جانب سے عدالتی فیصلے کو غیر منصفانہ قرار دیا گیا جس پر عدالت نے سکول انتظامیہ کو طلب کرلیا اور آئی جی اسلام آباد کو سکول انتظامیہ کو فوری پیش کرنے کا حکم دیا۔ سپریم کورٹ آف پاکستان نے ایک بار پھر 5 ہزار روپے ماہانہ سے زائد فیس والے نجی سکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کرنے کا حکم دیا۔