حکومت اور اسٹیبلشمنٹ سے عظیم دوست چین ناراض

پاکستان کے سینئر سیاستدان اور مذہبی رہنما مولانا فضل الرحمان نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کا عظیم دوست چین جو ہر مشکل گھڑی میں پاکستان کے ساتھ کھڑا ہوتا ہے پاکستان سے ناراض ہے۔ 

پاکستان کی موجودہ خارجہ پالیسی نے چین کے مفادات کا تحفظ کرنے کی بجائے امریکہ کے مفادات کا تحفظ کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان نے صرف امریکہ کو خوش کرنے کے لیے 35 ارب ڈالر چین کی انوسٹمنٹ روکنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔ 

مولانا فضل الرحمن کا کہنا ہے کہ پاکستان کے اصل حکمران اور کٹھ پتلی وزیراعظم پاکستان کے مفادات کا تحفظ کرنے میں ناکام رہے ہیں۔ ہم کسی صورت بھی اپنے عظیم دوست چین کو ناراض نہیں کرسکتے خواہ اس کے لیے ہمیں کوئی بھی قیمت ادا کرنا پڑے ۔

انہوں نے کہا کہ اس تمام صورتحال کے پیش نظر میں تمام مذہبی جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کر رہا ہوں تا کہ ہم اس حکومتی اقدام کو روک سکیں۔

You might also like