Khouj English Advertising Privacy Policy Contact Us
Connect with us

ٹیکنا لوجی

اوزون کی پرت بحال ہونا شروع

Published

on

aazoone

زمین والوں اور خود زمین کے لیے یہ ایک اچھی خبر یہ ہے کہ ہمارے سروں پر حفاظتی چھتری یعنی اوزون کی چادر تیزی کے ساتھ بہتر ہورہی ہے توقع ہے کہ 2060ء تک اس تہہ میں موجود سوراخ مکمل طور پر بھر جائے گا۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ اقوامِ متحدہ نے اوزون کو تباہ کرنے والے زمینی کیمیکلز پر تیس سال قبل مکمل پابندی عائد کردی تھی۔ ان میں سرِ فہرست کلورو فلورو کاربنز تھے جو فضا میں جاکر اوزون کو تباہ کررہے تھے۔ اس ضمن میں ایک رپورٹ بھی شائع کی گئی ہے جس کی تائید خود اقوامِ متحدہ کے مجاز اداروں نے بھی کی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے 1989ء میں مانٹریال پروٹوکول کے تحت اوزون دشمن مصنوعات اور کیمیکلز پر پابندی عائد کردی گئی تھی اور اس کے بعد اوزون کی سطح بحال ہونا شروع ہوگئی تاہم اس کی مکمل بحالی میں ابھی کچھ وقت درکار ہے اور 2060ء تک اوزون کی چاک چادر گویا مکمل طور پر بحال ہوجائے گی۔

زمین سے 20 سے 30 کلومیٹر کی بلندی پر واقع اوزون کی سطح سورج سے آنے والی خطرناک بالائے بنفشی (الٹرا وائلٹ شعاعوں) کو جذب کرتی ہے اور اگر یہ شعاعیں براہِ راست زمین تک پہنچ جائیں تو سرطان سمیت کئی امراض اور پریشانیوں کی وجہ بن سکتی ہیں۔

2018ء کی سائنسی رپورٹ کے مطابق 2000ء کے بعد سے ہر سال اوزون کی ایک سے تین فیصد مقدار فی سال بحال ہوتی جارہی ہے اور اب کئی مقامات پر اوزون کی بہتر ہوچکی ہے اور اس کے سوراخ بھر رہے ہیں۔

اگر مثبت معاملات اسی رفتار سے چلتے رہے تو سائنس دانوں کو امید ہے کہ 2030ء تک شمالی نصف کرے میں اوزون کی سطح 1980ء کی سطح تک آجائے گی جبکہ جنوبی قطب ( ساؤتھ پول) کے اوپر موجود اوزون 2060ء تک بحال ہوجائے گی۔

ٹیکنا لوجی

چین نے ’کوانٹم ریڈار‘ بنانے کا دعویٰ کردیا

Published

on

redaar

 ہم جانتے ہیں کہ امریکا اور دیگر اقوام گزشتہ نصف صدی سے اسٹیلتھ طیارے استعمال کررہی ہیں اور ان کی افادیت بھی سامنے آچکی ہے کیونکہ یہ جدید ترین ریڈار میں بھی نمودار نہیں ہوتے۔

اسٹیلتھ بمبار طیاروں کا بیرونی ڈھانچہ کچھ اس طرح سے بنایا جاتا ہے کہ وہ یا تو ریڈار کی امواج کو جذب کرلیتا ہے یا پھر انہیں کچھ اس طرح دوسرے زاویوں پر منتشر کرتا ہے کہ وہ دوبارہ ریڈار تک پہنچ کر اس کی خبر نہیں دے پاتیں۔ اس کےلیے پورے طیارے کی بیرونی ڈیزائننگ، بازوؤں کی خمیدگی اور دیگر بیرونی اشکال کو خاص زاویوں پر موڑا جاتا ہے۔

لیکن اب چین نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے ایسا کوانٹم ریڈار بنایا ہے جس سے جدید ترین اسٹیلتھ طیارے بھی اوجھل نہیں رہ سکتے۔

حال ہی میں چین کے شہر زوہائی کے ایئرشو میں چائنا الیکٹرونکس ٹیکنالوجی گروپ کارپوریشن نے دنیا کا پہلا کوانٹم ریڈار پیش کیا ہے جس سے جدید ترین اسٹیلتھ طیارے بھی اوجھل نہیں رہ سکتے۔ کمپنی نے مزید بتایا کہ پہلی مرتبہ یہ ریڈار 2015 میں ٹیسٹ کیا گیا تھا۔

کوانٹم ریڈار کا اصول بتاتے ہوئے کمپنی نے کہا کہ عام ریڈار ایک الیکٹرومیگنیٹک (برقناطیسی) شعاع پھینکتا ہے لیکن کوانٹم ریڈار الجھے ہوئے (اینٹینگلڈ) فوٹونز کی دو مسلسل شعاعیں خارج کرتا ہے لیکن ان میں سے صرف ایک شعاع ہی باہر پھینکی جاتی ہے؛ اور کوانٹم فزکس کے تحت دونوں ہی شعاعوں میں تبدیلیاں نوٹ ہوتی ہیں۔

اس کے نتیجے میں ریڈار میں ہی روکے جانے  والی شعاع میں تبدیلیاں نوٹ کرکے معلوم کیا جاسکتا ہے کہ پھینکی جانے والی شعاع پر کیا گزری ہے اور اس کا سامنا کس سے ہوا ہے؟ اس طرح کسی اسٹیلتھ طیارے کی علامت (سگنیچر) معلوم کی جاسکتی ہے۔

کمپنی کے شائع کردہ بروشر کے مطابق نیا ریڈار نظر نہ آنے والے طیاروں کی شناخت، ریڈار کی محدود صلاحیت اور برقی جنگ کے مسائل حل کرنے کےلیے ایک بہترین ایجاد ہے۔

تاہم یونیورسٹی آف سرے کے ماہرِ طبیعیات ایلن وڈورڈ نے کہا کہ یہ ایک افواہ بھی ہوسکتی ہے کیونکہ اس سے قبل چینی ماہرین ایسی ٹیکنالوجیز کا دعویٰ کرتے رہے ہیں جن کا کوئی عملی وجود نہیں۔ اس معاملے سے پردہ اٹھائے بغیر ہم کچھ نہیں کہہ سکتے۔

واضح رہے کہ صرف چینی صحافیوں کو ہی کوانٹم ریڈار کی بریفنگ دی گئی اور انہیں دکھایا گیا جبکہ غیرملکی صحافیوں کو اس بریفنگ سے باہر نکال دیا گیا تھا۔

Continue Reading

ٹیکنا لوجی

آئی فون ایکس اپڈیٹنگ کے دوران پھٹ گیا

Rashid Saeed

Published

on

i phone x

ٹوئٹر پر ایک شخص نے اپنے اسمارٹ فون کی تصاویر پوسٹ کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ اس کا ایپل آئی فون ایکس آپریٹنگ سسٹم 12.1 کی اپڈیٹنگ کے دوران پھٹ گیا۔ ٹوئٹر صارف راکی محمدعلی (@rocky_mohamad) نے اپنے متاثرہ آئی فون کی تصاویر پوسٹ کی ہیں اور ایپل کو ٹیگ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اپ ڈیٹ کرتے ہوئے ان کا فون اس قدر گرم ہوا کہ وہ پھٹ گیا۔

راکی محمدعلی کی پوسٹ کے جواب میں ایپل نے کہا کہ یہ فون کا بالکل بھی متوقع طرز عمل نہیں ہے،آپ ہمیں براہ راست پیغام بھیجیں تاکہ ہم اسے مزید دیکھ سکیں۔ ایپل کے جدید ترین 6 کور اے 11 پروسیسر کا حامل آئی فون ایکس پہلا آئی فون ہے جو کہ OLED ڈسپلے کے ساتھ لانچ کیا گیا ہے۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب کسی صارف نے آئی فون پھٹنے کی شکایت کی ہو اس کے قبل اگست میں چین میں ایک صارف نے دعویٰ کیا تھا کہ اس کا فون چلتی ٹیکسی میں پھٹ گیاتھا۔

Continue Reading

ٹیکنا لوجی

موہن جودڑو اورہڑپہ موسمیاتی تبدیلیوں سے تباہ

Published

on

harpa

امریکی ماہرین نے کہا ہےکہ موسمیاتی تبدیلیاں قدیم تہذیب سندھ کے زوال کی اہم وجہ ہیں اور ان ہی کے باعث موہن جودڑو اور ہڑپہ تہذیب دھیرے دھیرے تباہی سے دوچار ہوکر فنا ہوگئیں۔

ہم جانتے ہیں کہ سندھ کی قدیم تہذیب کے دو بڑے مراکز ہڑپہ اور موہن جودڑو ہیں اور اس کے علاوہ پاکستان اور بھارت میں بھی اس کے مختلف آثار ملے ہیں۔ امریکا میں واقع وُوڈز ہولز اوشیانو گرافک انسٹی ٹیوشن کے ایک نئے تجزیے کے مطابق عمدہ شہر، گودام، نکاسی کے نظام اور بہترین شہری سہولیات ہونے کے باوجود چار ہزار سال پرانی یہ تہذیب آب و ہوا میں تبدیلی (کلائمیٹ چینج) کی وجہ سے روبہ زوال ہوکر فنا ہوگئی تھی۔

1800 قبل مسیح میں قدیم تہذیب کے باشندوں نے اس شہر کو خیرباد کہنا شروع کیا اور ہمالیہ کے دامن میں جاکر چھوٹے چھوٹے گاؤں میں رہنا شروع کردیا۔ ووڈ ہولز انسٹی ٹیوٹ کے مطابق موسمیاتی تبدیلیوں سے یہ خطہ ناقابلِ رہائش ہونے لگا تھا۔

2500 قبل مسیح میں ہڑپہ تہذیب کا موسم بدلنا شروع ہوا اور موسمِ گرما کا مون سون نظام دھیرے دھیرے کمزور پڑا۔ زراعت مشکل ہوگئی اور غلہ بانی بھی کم ہوتی گئی اور یوں یہ عظیم تہذیب اپنے اختتام کو پہنچی تھی۔

اس ضمن میں وُوڈز ہولز اوشیانو گرافک انسٹی ٹیوشن کے ارضیات داں ڈاکٹر لائی ویو گایوسِن اور ان کے ساتھیوں نے اس پر تحقیق کرکے مقالہ شائع کیا ہے جو 13 نومبر 2018ء کے ’کلائمٹ آف دی پاسٹ‘ نامی جرنل میں شائع ہوا ہے۔ ماہرین  کہتے ہیں کہ مون سون کے بگاڑ نے پوری وادی میں کھیتی باڑی کو ناممکن بنادیا تھا۔

لیکن اس دوران بحیرہ روم کے طوفان ہمالیائی سلسلے سے ٹکراتے تھے اور پاکستانی علاقوں میں تھوڑی بہت بارش کی وجہ ضرور بنتے تھے لیکن مون سون نہ ہونے کی وجہ سے دریاؤں کا بہاؤ شدید متاثر ہوا۔ اسی لیے وادی سندھ کے لوگوں نے دیگر علاقوں میں سکونت اختیار کی اور یوں دھیرے دھیرے پوری بستی ہی خالی ہوگئی۔

اگرچہ اس کے آثار آج کی مٹی میں نہیں ملتے لیکن ماہرین نے پاکستانی ساحلوں اور سمندر کے کئی مقامات پر مٹی کے نمونے جمع کیے اور ان کا مطالعہ کیا۔ انہوں نے ان نمونوں میں یک خلوی (سنگل سیل) پلانکٹن کا جائزہ لیا جنہیں ’فورا مینی فیرا‘ یا مختصراً فورمز کہا جاتا ہے۔ اس سے معلوم ہوا کہ کونسا پلانکٹن سرد موسم اور کونسا موسمِ گرما میں پروان چڑھا۔

اس طرح انہوں نے خطے کے قدیم جینیاتی مادے کا بغور مطالعہ کیا ۔ اس دوران دریا اور سمندر کے کنارے کے علاقے میں موجود قدیم مٹی اور خود اس میں موجود قدیم پلانکٹن سے ہزاروں سال قدیم موسم کا ایک نقشہ مرتب کیا جس سے معلوم ہوا کہ کس طرح گرمیوں کا مون سون کمزور اور سردیوں کا مون سون توانا ہوا اور اس سے زراعت ناممکن ہوگئی۔

اگلے مرحلے میں لوگوں نے ماضی کے ان عظیم شہروں کو چھوڑنا شروع کیا اور یوں وہ کئی صدیوں میں تتربتر ہوکر علاقے کے دیگر مقامات پر منتقل ہوگئے اور یوں یہ موئن جودڑو اور ہڑپہ ویران ہوتے چلے گئے۔

Continue Reading
Advertisement
supreem court registry
پاکستان2 گھنٹے ago

45 افسران تنخواہیں واپس کرنے پر رضا مند

rporter
انٹرنیشنل2 گھنٹے ago

عدالت نے ڈولڈ ٹرمپ کا حکم نامہ مسترد کردیا

Double Sawari
پاکستان2 گھنٹے ago

ڈبل سواری پر پابندی کی مدت میں کمی

sardar usman buzdaar
پاکستان3 گھنٹے ago

وزیراعلیٰ پنجاب کا شاہانہ پروٹوکول ، شہری مایوس

usman buzdar
پاکستان3 گھنٹے ago

ترقیاتی سکیمیں حکومت کا عوام پر احسان نہیں

bilawal bhutto
پاکستان3 گھنٹے ago

ظلم و ناانصافیوں کے باوجود انتقامی سیاست نہیں کی

sindh high court
کھیل3 گھنٹے ago

متنازع ٹی 10 لیگ، پاکستانی شہر کا نام استعمال کرنے پر پابندی عائد

pakistan and falsteen teams
کھیل3 گھنٹے ago

دوستانہ فٹبال میچ‘ فلسطین کی پاکستان کو شکست

arrest
پاکستان4 گھنٹے ago

30 سال سے ڈکیتیاں کرنے والا ملزم گرفتار

chief justice of pakistan
پاکستان4 گھنٹے ago

پی آئی اے حکام سے بدتمیزی پر از خود نوٹس

hamza salman shebaz
پاکستان4 گھنٹے ago

نیب نے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کردی

cda officer ayaaz
پاکستان4 گھنٹے ago

سی ڈی اے افسر کے لاپتہ ہونے کا ڈراپ سین

ehsan mani najam sethi
کھیل4 گھنٹے ago

قانونی جنگ میں شدت،احسان مانی کو ایک اور نوٹس

pak hocky team
کھیل5 گھنٹے ago

کھلاڑیوں کو بھارت کے ویزے جاری

pakistan newzealand test match
کھیل5 گھنٹے ago

ٹیسٹ‘ پہلا دن ختم، قومی ٹیم کے 2 وکٹوں پر 59 رنز

chief justic and imran khan
پاکستان7 گھنٹے ago

اختیارات کی جنگ شروع

SUBWAY
پاکستان5 گھنٹے ago

’’سب وے ‘‘ریسٹورنٹس میں بھی شرمناک ’’تبدیلی ‘‘

peryanca chopda
شوبز22 گھنٹے ago

دمہ کے باوجود زندگی میں کامیابیاں حاصل کیں

shahbaz sharif and ch nisar
پاکستان7 گھنٹے ago

5 گھنٹے کی طویل ملاقات۔۔۔ بڑی پیشرفت

rusma mansoor
انٹرنیشنل23 گھنٹے ago

ملائیشیا:سابق وزیراعظم کی اہلیہ رشوت وصولی میں گرفتار

fwad ch2
پاکستان22 گھنٹے ago

صادق سنجرانی تحریک عدم اعتماد سے ڈر گئے

nwaz shareefe
پاکستان13 گھنٹے ago

معمر خاتون نے نواز شریف سے پیسے واپس مانگ لیئے

erupe union
انٹرنیشنل22 گھنٹے ago

برطانیہ ؛سیاسی بحران عروج پر، حکومت خطرے میں پڑگئی

sara ali khan
شوبز6 گھنٹے ago

بدقسمتی کا سفر ختم ہونے کو ہے

شوبز10 گھنٹے ago

جسم فروشی کرانے والی کوریوگرافر گرفتار

kashkanjee
انٹرنیشنل14 گھنٹے ago

سعودی شہریوں پرامریکی پابندیاں

mujahid kamran
پاکستان5 گھنٹے ago

نیب حکام خواجہ سعد رفیق کے خلاف ثبوت چاہتے ہیں

dignose card
صحت14 گھنٹے ago

امراض کی شناخت کرنے والا کارڈ، قیمت ایک ڈالر

saqib nisar1
پاکستان12 گھنٹے ago

وزیراعظم کو بے لگام نہیں ہونے دیں گے

laibuer
پاکستان14 گھنٹے ago

بھٹا مزدور گاڑیوں سے لاعلم،ٹیکس کا نوٹس موصول

مقبول خبریں